تازہ ترین
انٹر بینک: ڈالر کی قیمت میں چند پیسہ کمیگوگل میپس میں بڑی تبدیلی جو بیشتر افراد کو پسند نہیں آئیملک میں سونے کی قیمت میں اضافہبرائل مرغی کے گوشت کی قیمت میں اضافہروپے کی قدر بحال ہونے لگی ڈالر مزید سستاانٹر بینک میں ڈالر مزید سستاموسم سرما میں ادرک لینا کیوں فائدہ مند ہے؟ کھانے کے طریقے جانیںنواز شریف کی اسلام آباد ہائی کورٹ میں پیشیورلڈکپ کون جیتے گا؟ بڑی پیش گوئیپنجاب بھر میں ماسک پہننا لازمی قرارملک کا ماحول اس وقت انتخابات کے لیے سازگار آصف زرداریملک میں سونے کی قیمت میں کمیواٹس ایپ چینلز استعمال کرنے والے صارفین کے لیے نیاں فیچر متعارفڈالر کی قیمت میں معمولی کمیملک کو دیوالیہ ہونے سے بچایا، ریاست بچ گئی سیاست بھی بچ جائے گی، شہبازشریفمہنگائی کے مارے عوام پر بجلی بم گرانےکی تیاری مکملپیٹرول کی قیمت میں اضافے کا امکانگوگل سرچ انجن کا ایک نیا دلچسپ فیوچر متعارفعالمی مارکیٹ میں سونے کی قیمت میں اضافہپاکستان اسٹاک ایکسچینج میں مثبت رجحان

دنیا میں درختوں کا خاتمہ تیزی سے ہونا انسانیت کیلئے تباہ کن ہے، تحقیق

سائنسدانوں نے کہا کہ زمین پر درختوں کی مختلف اقسام کا خاتمہ بہت زیادہ تیز رفتاری سے ہورہا ہے اور انسانیت کو اس پر فکرمند ہونا چاہیے۔

 

ان کا کہنا تھا کہ دنیا بھر میں درختوں کی مختلف اقسام معدوم ہورہی ہیں جو کہ دہائیوں پرانا مسئلہ ہے، مگر اب یہ زیادہ بدتر ہوگیا ہے۔

 

درخت زمین کے مختلف نظاموں کے لیے اہم کردار ادا کرتے ہیں اور اس نئی تحقیق میں انتباہ کیا گیا کہ زمین پر درختوں کی تعداد میں کمی بدترین سطح پر پہنچ چکی ہے۔

 

جریدے نیچر میں شائع تحقیق کے لیے 20 ممالک سے تعلق رکھنے والے سائنسدان اکٹھے ہوئے تھے۔

تحقیق میں درختوں کی اقسام سے محرومی کے مختلف اثرات کا تخمینہ لگایا گیا تھا۔

سائنسدانوں نے بتایا کہ درختوں سے محرومی سے صرف مقامی ماحول ہی متاثر نہیں ہوتا بلکہ لوگوں کا روزگار، معیشت اور خوراک سب پہلوؤں پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ دنیا بھر کے 50 فیصد پودے اور جانور اپنی رہائش کے لیے درختوں پر انحصار کرتے ہیں، مگر انسانوں کی جانب سے ترقی کے نام پر درختوں کا صفایا کیا جارہا ہے۔

سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ درختوں کی مخصوص اقسام ختم ہونا دنیا کے لیے مشکلات بڑھا دے گا، کیونکہ یہ درخت پانی، کاربن اور دیگر اہم اجزا کی ری سائیکلنگ میں اہم ترین کردار ادا کرتے ہیں۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »