تازہ ترین
پاکستان بزنس گروپ کا بجٹ پر مباحثہ،عمران خان اداروں پر تنقید کر کے کامیابی حاصل نہیں کرسکتے، بلاول بھٹوملک میں سونا مہنگا ہوگیاقومی اسمبلی نے پیٹرولیم لیوی میں مرحلہ وار 50 روپے اضافےکی منظوری دیدیکراچی ائیر پورٹ کے برقی زینوں کی تبدیلی کے کام کا آغاز کردیا گیاآئندہ مالی سال کا فنانس بل: موبائل فون مزید مہنگے ہوگئےاساتذہ کی کمی کے باعث گیارہ ہزار اسکولوں کا بند ہونا شرمناک عمل ہے۔ محمدعظیم صدیقیروپےکی قدر میں بہتری، ڈالر مزید سستا ہوگیاکراچی میں سی این جی تین دن کیلئے بند کرنے کا اعلانذو الحجہ کا چاند دیکھنے کیلئے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس آج ہوگاطویل لوڈشیڈنگ، کے الیکٹرک حکام کا اجلاس طلبشہباز اور بلاول اہم ملاقات، داخلی و خارجہ معاملات پر تفصیلی بات چیتخیبرپختونخوا: نسوار مہنگی ہونے پر شہری نے پولیس میں شکایت درج کرادیکراچی اور حیدرآباد میں موسلا دھار بارشوں کی پیشگوئی، اربن فلڈنگ کا خطرہبجلی کا شارٹ فال 7 ہزار میگاواٹ، کراچی میں 22 گھنٹے تک لوڈشیڈنگ، ہنگامے، فائرنگ، لاٹھی چارج، خاتون جاں بحقکراچی میں یکم جولائی سے بارشوں کا امکانایف بی آر: رواں برس 6 ہزار ارب روپے ٹیکس کی وصولیکراچی:بجلی بندش کےخلاف احتجاج، پولیس اور مظاہرین میں جھڑپیں، لاٹھی چارج اور پتھراوآئی ایم ایف سے 1 نہیں 2 ارب ڈالر ملیں گے: وزیرِ اعظم شہباز شریفپاکستان دیوالیہ ہونے کے خطرے سے نکل چکا: مفتاح اسماعیل

کے الیکٹرک کے ٹیرف میں 0.57 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری

وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کی زیر صدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کا اجلاس ہوا جس میں کے الیکٹرک کے ٹیرف میں 0.57 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی گئی۔

ای سی سی اعلامیے کے مطابق انڈیپنڈنٹ پاور پروڈیوسرز (آئی پی پیز) کی طرز  پر  سرکاری پاور پلانٹس کے واجبات کی ادائیگی کا فیصلہ بھی کیا گیا، آئی پی پیز کو دوسری قسط کی ادائیگی کیلئے 96 ارب 13 کروڑ روپے کی گرانٹ منظور کرلی گئی۔

ای سی سی کے مطابق حویلی بہادر شاہ اور  بلوکی پاور سمیت تین پاور پلانٹس کیلئے 17 ارب روپے کی منظوری دی گئی، کے الیکٹرک کے سہ ماہی ٹیرف ایڈجسٹمنٹ کیلئے 36 ارب 94 کروڑ کی سبسڈی کی منظوری بھی دی گئی۔

اعلامیے کے مطابق وزیراعظم پیکج کے تحت شہداء کے خاندانوں کو ادائیگی کیلئے ایک ارب 22 کروڑ روپے کی گرانٹ منظور کرلی گئی۔

اعلامیے کے مطابق منسٹر انکلیو اسلام آباد کی تزئین و مرمت کیلئے اضافی فنڈز کی سمری مسترد کردی گئی۔ وزارت خزانہ کے مطابق ای سی سی نے کفایت شعاری پالیسی کے تحت سمری مسترد کی۔

اجلاس میں بریفنگ دی گئی کہ گزشتہ حکومت 2018 سے 2021 کے دوران پہلے ہی 14 کروڑ سے زیادہ تزئین و مرمت پر خرچ کر چکی ہے۔

اس کے علاوہ صوبوں میں ویکسین کی فراہمی یقینی بنانے کیلئے 6 ارب 13 کروڑ روپے کی گرانٹ منظور کی گئی  جبکہ مقبوضہ کشمیر کے مہاجرین کی مستقل آباد کاری کیلئے 3 ارب سے زیادہ کی گرانٹ منظور کی گئی۔

وزارت داخلہ کیلئے 5 ارب 89 کروڑ روپے، این سی او سی کی تشہیری مہم کیلئے 4 کروڑ  اور  کابینہ ڈویژن کیلئے 12 کروڑ  58  لاکھ روپے کی گرانٹ منظور کی گئی۔

وزارت خارجہ کیلئے 3 ارب 75 کروڑ، آئی ٹی کیلئے 38 کروڑ ، وزارت ریلوے کیلئے بھی 5 ارب کی ضمنی گرانٹ کی منظور ی دی گئی۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »