تازہ ترین
ہائی بلڈ پریشر کے شکار افراد میں ظاہر ہونے والی علاماتسابق وزیر اعظم عمران خان کی حمایت میں ملک گیر مظاہروں کے بعد بیرون ملک بھی مظاہروں کا سلسلہ جاریعمران کے فونز چوری ہونے کا معاملہ، سی سی ٹی وی فوٹیجز میں گمشدگی کے شواہد نہ مل سکےحکومت کا چیئرمین نیب کو ہٹانے کا فیصلہکراچی دھماکا: وزیراعظم کا وزیراعلیٰ کو فون، ہر ممکن تعاون کی پیشکشملک میں ڈالر 196 روپے کا ہوگیاآرٹیکل 63 اے کی تشریح کیلئے صدارتی ریفرنس پر سماعت مکمل، فیصلہ آج سنایا جائیگاخشک سالی میں گھرے چولستان کے باسی قطرہ قطرہ پانی کو ترس گئےکراچی کے علاقے کھارادر میں دھماکا،خاتون جاں بحق، 12 افراد زخمیکراچی کے علاقے کھارادر میں دھماکے کی اطلاعپانی کی قلت، دریائے سندھ بعض مقامات پر صحرا بن گیاسیسی میں کام کرنے والے نجی سیکورٹی گارڈز کی کم سے کم اجرت 25 ہزار کردی گئی: سعید غنیروپے کے مقابلے میں ڈالر کی اونچی اڑان جاری، آج کتنا مہنگا ہوا؟شیخ محمد بن زید سے شارجہ کے المرشدی قبیلے کے سربراہ قاسم المرشدی کی تعزیتعمران خان کے جان کے خطرے سے متعلق بیان پر جوڈیشل کمیشن بنانے کی پیشکشعمران خان کی سیکیورٹی کیلئے پولیس، ایف سی کی بھاری نفری تعیناتادارہ مداخلت کرے، ٹیکنوکریٹ حکومت لائے اور ستمبر میں الیکشن کرائے: شیخ رشیدسلیکٹڈ وزیر اعظم سے نجات بیرونی سازش نہیں ، جمہوری عمل تھا، بلاولوزیراعظم شہباز شریف کی شیخ خلیفہ کی وفات پر یو اے ای کے صدر شیخ محمد بن زید النہیان سے تعزیتنئی حکومت کے دعووں کے برعکس آٹا،گھی،گوشت اوردالیں سمیت بڑہتی ہوئی مہنگائی باعث تشویش ہے: محمد حسین محنتی

ہرٹ اٹیک میں دل کے حصوں کو مرنے سے بچانے والا مکڑی کا زہر

کوئنز لینڈ: آسٹریلیا میں عام پائی جانے والی ایک مکڑی کے زہر میں ایسے جزو کا انکشاف ہوا ہے جس سے دل کے دورے میں مریض کو فائدہ ہوسکتا ہے۔

اس سے قبل اسی فنل ویب نامی مکڑی کے زہر کو جلد کے سرطان اور فالج کے حملے کے خلاف مؤثر پایا گیا ہے۔ اب اس میں ایک سالمہ(مالیکیول) پایا گیا ہے جو ہارٹ اٹیک کے بعد ’موت کے سگنل‘ کو روک سکتا ہے اور مریض کو ابتدائی طبی مدد فراہم کرسکتا ہے۔

یونیورسٹی آف کوئنزلینڈ کے ماہرین نے پچھلی تحقیق پردوبارہ نظر ڈالتے ہوئے فنل ویب مکڑی کے زہر میں ایک چھوٹا سالمہ دیکھا ہے۔ اسے فالج زدہ چوہوں پر آزمایا گیا تو اس نے دماغی تباہی کو بہت حد تک روکا یہاں تک کہ فالج کے حملے کے کئ گھنٹوں بعد بھی اس کی شفائی تاثیر نمایاں رہی۔

جامعہ سے وابستہ پروفیسر گلین کنگ کہتے ہیں کہ اس پروٹین کا نام ’ایچ آئی ون اے‘ ہے، اگر فالج کے آٹھ گھنٹے بعد بھی اس کا ٹیکہ لگایا جائے تو حیرت انگیز طور پر بہت فائدہ ہوتا ہے اور دماغ تباہی سے بچ جاتا ہے۔ پھراسی سالمے کو دل کے دورے کے لیے بھی آزمایا گیا۔

سائنسدانوں نے انسانی قلب کے دھڑکتے ہوئے خلیات لیے اور ان پر بیرونی طور پر ہارٹ اٹیک جیسا دباؤ ڈالا۔ لیکن اس کےبعد جیسے ہی دل پر یہ سالمہ ڈالا گیا تو دل کے خلیات میں تیزی سے پھیلنے والے ’ڈیتھ سگنل‘ رک گئے۔ دل کے دورے میں یہ سگنل دل میں ہر خلئے تک پھیل کر دل کو نقصان پہنچاسکتے ہیں۔

’ دل کے دورے کے بعد قلب تک خون کی فراہمی متاثر ہوتی ہے جس سے آکسیجن بھی کم ہوجاتا ہے۔ اس طرح دل کے پٹھوں کے خلیات تیزابی ہوجاتے ہیں اور سب مل کر دل کے خلیات کو ’مرجانے کا پیغام‘ دیتے ہیں،‘ تحقیق میں شامل ایک اور سائنسداں ناتھن پلپنت نے کہا۔

تحقیق سے معلوم ہوا کہ ایچ آئی ون اے نے دل کے آئن چینل میں تیزاب شناخت کرنے کی قوت سلب کرلی اور موت کا سگنل ایک مقام پر رک گیا اور جب دل کے خلیات تک یہ سگنل نہیں پہنچا تو وہ سلامت اور زندہ رہے۔ اب تک دل کے خلیات کو فنائیت کا سگنل روکنے کا کوئی طریقہ دریافت نہیں ہوسکا ۔ اس طرح ہارٹ اٹیک سے دل کے نقصان کو بچانے میں مدد مل سکے گی۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »