تازہ ترین
ہائی بلڈ پریشر کے شکار افراد میں ظاہر ہونے والی علاماتسابق وزیر اعظم عمران خان کی حمایت میں ملک گیر مظاہروں کے بعد بیرون ملک بھی مظاہروں کا سلسلہ جاریعمران کے فونز چوری ہونے کا معاملہ، سی سی ٹی وی فوٹیجز میں گمشدگی کے شواہد نہ مل سکےحکومت کا چیئرمین نیب کو ہٹانے کا فیصلہکراچی دھماکا: وزیراعظم کا وزیراعلیٰ کو فون، ہر ممکن تعاون کی پیشکشملک میں ڈالر 196 روپے کا ہوگیاآرٹیکل 63 اے کی تشریح کیلئے صدارتی ریفرنس پر سماعت مکمل، فیصلہ آج سنایا جائیگاخشک سالی میں گھرے چولستان کے باسی قطرہ قطرہ پانی کو ترس گئےکراچی کے علاقے کھارادر میں دھماکا،خاتون جاں بحق، 12 افراد زخمیکراچی کے علاقے کھارادر میں دھماکے کی اطلاعپانی کی قلت، دریائے سندھ بعض مقامات پر صحرا بن گیاسیسی میں کام کرنے والے نجی سیکورٹی گارڈز کی کم سے کم اجرت 25 ہزار کردی گئی: سعید غنیروپے کے مقابلے میں ڈالر کی اونچی اڑان جاری، آج کتنا مہنگا ہوا؟شیخ محمد بن زید سے شارجہ کے المرشدی قبیلے کے سربراہ قاسم المرشدی کی تعزیتعمران خان کے جان کے خطرے سے متعلق بیان پر جوڈیشل کمیشن بنانے کی پیشکشعمران خان کی سیکیورٹی کیلئے پولیس، ایف سی کی بھاری نفری تعیناتادارہ مداخلت کرے، ٹیکنوکریٹ حکومت لائے اور ستمبر میں الیکشن کرائے: شیخ رشیدسلیکٹڈ وزیر اعظم سے نجات بیرونی سازش نہیں ، جمہوری عمل تھا، بلاولوزیراعظم شہباز شریف کی شیخ خلیفہ کی وفات پر یو اے ای کے صدر شیخ محمد بن زید النہیان سے تعزیتنئی حکومت کے دعووں کے برعکس آٹا،گھی،گوشت اوردالیں سمیت بڑہتی ہوئی مہنگائی باعث تشویش ہے: محمد حسین محنتی

پاکستان میں مہنگائی، دیگرممالک میں کم شرح سود سے ترسیلات بڑھ رہی ہیں، میاں زاہد حسین

میاں زاہد حسین: فائل فوٹو

کراچی؛ نیشنل بزنس گروپ پاکستان کے چیئرمین، پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولزفورم وآل کراچی انڈسٹریل الائنسکے صدراورسابق صوبائی وزیرمیاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ کرونا وائرس کی بندشوں نے ہنڈی کے کاروبار کی کمرتوڑدی ہے۔

IMG_2425
ہنڈی
کے کاروبار کی بحالی اورسفری پابندیوں کے مکمل خاتمہ تک دیگرممالک میں مقیم پاکستانی قانونی زرائعسے رقم بھجواتے رہیں گے جس سے ترسیلات بڑھتی رہیں گی۔ ترسیلات میں اضافہ میں حکومت اور مرکزی بینک کیمثبت پالیسیوں اوردیگرممالک میں بہت کم شرح سود نے بھی کردارادا کیا ہے۔ میاں زاہد حسین نے کاروباری برادری سےبات چیت کرتے ہوئے کہا کہ دیگرممالک میں شرح سود انتہائی کم اورپاکستان میں زیادہ ہے جسکی وجہ سے دیگرممالکمیں مقیم پاکستانی روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ میں سرمایہ لگا رہے ہیں۔  ہم اسٹیٹ بینک کی جانب سے شرح سود سات فیصدکی سطح پربرقرار رکھنے کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں تاہم شرح سود میں دو فیصد مزید کمی کی ضرورت ہے جسسے کاروباری سرگرمیوں میں اضافہ ہوگا، جس کے نتیجے میں ریونیو اور روزگار دونوں میں بہتری آئے گی۔ انھوں نےکہا کہ پاکستان میں زبردست مہنگائی اور غربت کی وجہ سے بھی بیرون ملک پاکستانی اپنےعزیزواقارب کو زیادہ پیسہبھجوا رہے ہیں تاکہ وہ مشکل حالات کا سامنا کر سکیں۔ میاں زاہد حسین نے کہا کہ کرونا ویکسینیشن کے نتیجے میں  سفری پابندیوں کے خاتمہ اوردیگرممالک میں شرح سود میں اضافہ کی صورت میں ترسیلات کم اور زرمبادلہ کے ذخائرپر دباؤ آ سکتا ہے جس کے لئے ابھی سے اقدامات کی ضرورت ہے۔ میاں زاہد حسین نے مذید کہا کہ موجودہ حکومت کےبرسر اقتدار آتے وقت کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ بیس ارب ڈالر تھا جس پر قابو پانے کے لئے تین دوست ممالک سے بارہ اربڈالر کا قرضہ لیا گیا، روپے کی قدر کم کرنے کے ساتھ ساتھ درآمدی بل کم کیا گیا، برآمدات بڑھائی گئیں اور ترسیلاتکی حوصلہ افزائی کی گئی۔ روپے کی قدر میں جتنی کمی کی گئی برآمدات اس حساب سے نہیں بڑھیں تاہم کروناوائرس کی وجہ سے بھارت اوربنگلہ دیش کے ٹیکسٹائل آرڈرز پاکستان کو ملنے سے ایکسپورٹ میں دو ارب ڈالر کااضافہ ہوا۔ اس دوران گاڑیوں کے فالتو پرزوں، خوردنی تیل، اشیائے خورد و نوش اورکپاس کی درآمدات میں اضافہہواجس سے زرمبادلہ کے ذخائر پر دباؤ بڑھاہے۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »