تازہ ترین
سابق وزیر اعظم عمران خان کی حمایت میں ملک گیر مظاہروں کے بعد بیرون ملک بھی مظاہروں کا سلسلہ جاریعمران کے فونز چوری ہونے کا معاملہ، سی سی ٹی وی فوٹیجز میں گمشدگی کے شواہد نہ مل سکےحکومت کا چیئرمین نیب کو ہٹانے کا فیصلہکراچی دھماکا: وزیراعظم کا وزیراعلیٰ کو فون، ہر ممکن تعاون کی پیشکشملک میں ڈالر 196 روپے کا ہوگیاآرٹیکل 63 اے کی تشریح کیلئے صدارتی ریفرنس پر سماعت مکمل، فیصلہ آج سنایا جائیگاخشک سالی میں گھرے چولستان کے باسی قطرہ قطرہ پانی کو ترس گئےکراچی کے علاقے کھارادر میں دھماکا،خاتون جاں بحق، 12 افراد زخمیکراچی کے علاقے کھارادر میں دھماکے کی اطلاعپانی کی قلت، دریائے سندھ بعض مقامات پر صحرا بن گیاسیسی میں کام کرنے والے نجی سیکورٹی گارڈز کی کم سے کم اجرت 25 ہزار کردی گئی: سعید غنیروپے کے مقابلے میں ڈالر کی اونچی اڑان جاری، آج کتنا مہنگا ہوا؟شیخ محمد بن زید سے شارجہ کے المرشدی قبیلے کے سربراہ قاسم المرشدی کی تعزیتعمران خان کے جان کے خطرے سے متعلق بیان پر جوڈیشل کمیشن بنانے کی پیشکشعمران خان کی سیکیورٹی کیلئے پولیس، ایف سی کی بھاری نفری تعیناتادارہ مداخلت کرے، ٹیکنوکریٹ حکومت لائے اور ستمبر میں الیکشن کرائے: شیخ رشیدسلیکٹڈ وزیر اعظم سے نجات بیرونی سازش نہیں ، جمہوری عمل تھا، بلاولوزیراعظم شہباز شریف کی شیخ خلیفہ کی وفات پر یو اے ای کے صدر شیخ محمد بن زید النہیان سے تعزیتنئی حکومت کے دعووں کے برعکس آٹا،گھی،گوشت اوردالیں سمیت بڑہتی ہوئی مہنگائی باعث تشویش ہے: محمد حسین محنتیحکومت کا پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار رکھنے کا اعلان

غیر ملکی سرمایہ کاروں کے پسندیدہ ممالک کی اہمیت کم ہو رہی ہے، میاں زاہد حسین

میاں زاہد حسین: فائل فوٹو

ایف پی سی سی آئی کے نیشنل بزنس گروپ کے چیئرمین، پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولز فور م وآلکراچی انڈسٹریل الائنس کے صدر اور سابق صوبائی وزیر میاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ غیر ملکی سرمایہکاروں کے پسندیدہ ممالک میں بڑھتی ہوئی اجرت اور دیگر مسائل کی وجہ سے انکی وہ اہمیت نہیں رہی جوپہلے کبھی تھی۔

غیر ملکی سرمایہ کار اب بھارت بنگلہ دیش ویتنام اور چین میں سرمایہ کاری کے بجائےدیگر ممالک میں بھی امکانات کا جائزہ لے رہے ہیں اس لئے پاکستان غیر ملکی سرمایہ کاروں کو راغب کرنےکے لئے پالیسیاں بہتر بنائے۔

میاں زاہد حسین نے کاروباری برادری سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ غیر ملکیسرمایہ کاروں کو راغب کرنے کے لئے سیاسی عدم استحکام ختم کیا جائے، پالیسیوں کو از سر نو ترتیب دیاجائے اور ان میں بار بار تبدیلی نہ کی جائے۔انھوں نے کہا کہ ایک طرف برآمدات،درآمدات، روپے کی قدر اورترسیلات کی صورتحال اطمینان بخش ہے تو دوسری طرف براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کی صورتحالتشویشناک ہے۔ جولائی سے مارچ تک ایف ڈی آئی میں 35 فیصد کمی آئی ہے جبکہ گزشتہ سال کے مقابلہمیں امسال مارچ میں چالیس فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ہے جس میں سیاسی عدم استحکام کی صورت میںمذید کمی آئے گی۔ بہت سی غیر ملکی کمپنیوں نے پاکستان میں اپنا کاروبار بند کر دیا ہے جس سے سرمایہکاروں کو منفی پیغام گیا ہے۔آجکل بھی ایل این جی انفراسٹرکچر میں اربوں روپے کی سرمایہ کاری کرنےوالی کمپنیاں سرکاری اداروں کی جانب سے کھڑی کی جانے والی رکاوٹوں کی وجہ سے پریشان ہیں مگرانھیں کوئی پوچھنے والا نہیں ہے۔میاں زاہد حسین نے مذیدکہا کہ ماضی میں پاکستان میں سیکورٹی کیصورتحال اور بجلی کی کمی جیسے مسائل تھے جو اب حل کر لئے گئے ہیں مگر اسکے باوجود ایف ڈی آئیمیں کمی اس بات کا ثبوت ہے کہ غیر ملکی سرمایہ کار اب بھی مطمئن نہیں اورمختلف اوقات میں انکے لئےاعلان کردہ پیکج انھیں راغب کرنے کے لئے ناکافی رہے ہیں۔ پاکستان سرمایہ کاری کے اعتبار سے اب بھیایک سو آٹھویں نمبرپر ہے جس میں بہتر ی کے لیے کام کرنے کی ضرورت ہے۔ کئی ممالک میں ایف ڈی آئیانکے جی ڈی پی کے تین فیصد تک ہوتی ہے مگر پاکستان میں یہ ایک فیصد سے کم رہتی ہے جس میں مذیدکمی پریشا ن کن ہے۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »