تازہ ترین
سعید غنی کی ہتک عزت کی درخواست پر پی ٹی آئی رہنما حلیم عادل پر فرد جرم عائدراولپنڈی میں شادی ہال کی لفٹ گرگئی، ایک شخص جاں بحق، متعدد زخمیسانحہ مری انتظامیہ کی غفلت سے پیش آیا، انکوائری کمیٹی کی رپورٹصدرمملکت نے ایف بی آر کی انتظامی ناانصافی پر بزرگ شہری سے معذرت کرلیجھوٹ اور غلط بیانی وفاقی وزراء کا وطیرہ بن چکا ہے، امتیاز شیخشریف فیملی حکومت سے چار لوگوں کیلئے ڈیل مانگ رہی ہے، شہباز گل کا دعویٰشہزادہ ہیری نے گارڈز واپس لینے کیلئے برطانوی حکومت کیخلاف مقدمے کی دھمکی دیدیانسٹا گرام اب ٹک ٹاک کو اپنے پلیٹ فارم پر شامل کرنے کو تیارمیں عمران نیازی کو رات کو ڈراؤنے خواب کی طرح آتا ہوں: شہباز شریففیکٹری میں زہریلی گیس پھیلنے سے چینی شہری ہلاک، 2 متاثردنیا بھر میں اومی کرون سونامی کی طرح پھیلنے لگالی مارکیٹ کی عمارت سے اینٹی ائیرکرافٹ گن سمیت نیٹو کا جدید اسلحہ برآمد’اب بل نہیں سندھ واپس لیں گے‘، بلدیاتی قانون کیخلاف پی ٹی آئی، MQM اور GDA کا مظاہرہطالبان نے افغان اثاثوں کی بحالی کا مطالبہ کر دیاکورونا: این سی او سی نے پابندیوں کا نفاذ شروع کردیاعلی زیدی پی ٹی آئی کے سیکریٹری اطلاعات احمد جواد کے انکشافات پر صفائی دیں، سعید غنیایس بی سی کے سرٹیفکیٹ کےبغیر نئی عمارات کو یوٹیلیٹی کنکشنز نہ دینے کا حکمکیا منال نے احسن کی دولت کی وجہ سے ان سے شادی کی ہے؟کورونا کیسز: سندھ حکومت کا اسکول کھلے رکھنے کا فیصلہبپن راوت کا ہیلی کاپٹرگرنے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ سامنے آگئی، وجہ کیا تھی؟

کوشش ہے انگلینڈ سے سیریز ڈرا نہیں بلکہ جیت کر آئیں، اظہر علی

پاکستان ٹیسٹ ٹیم کے کپتان اظہر علی کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے پیدا ہونے والی حالات میں کرکٹ کا نیا ماحول پاکستانی کرکٹرز کیلئے زیادہ نیا نہیں ہوگا، صورتحال مختلف ضرور لیکن پاکستانی پلیئرز ایسے ماحول میں پہلے بھی کھیل چکے ہیں۔

اظہر علی کا کہنا تھا کہ انگلینڈ میں پاکستان کا ریکارڈ حوصلہ افزا ہے لیکن اس بار کوشش ہوگی کہ سیریز ڈرا نہیں کریں، بلکہ جیت کر آئیں۔

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان تین ٹیسٹ اور تین ٹی ٹوئنٹی میچز پر مشتمل سیریز پانچ اگست سے شروع ہوگی لیکن پاکستان کرکٹ ٹیم سیریز کے آغاز سے پانچ ہفتہ قبل ہی انگلینڈ پہنچ جائے گی تاکہ وہاں چودہ روز قرنطینہ کے بعد سیریز سے قبل بائیو سیکیور ماحول میں سیریز کی تیاری بھی کرسکے۔

ہر کسی کو احتیاطی تدابیر فالو کرنا ہوں گی، اظہر علی

سیریز کے دوران کرکٹرز کو سخت پروٹوکولز فالو کرنا ہوں گے جس کی وجہ سے کھلاڑیوں کی نقل و حرکت صرف اسٹیڈیم اور ہوٹلز تک محدود رہے گی، گراؤنڈ پر تماشائی بھی نہیں ہوں گے تاہم اظہر علی کہتے ہیں کہ پاکستانی کرکٹرز کیلئے یہ کچھ نیا نہیں، ہاں مگر صورتحال اس بار مختلف ہے اور ہر کسی کو احتیاطی تدابیر فالو کرنا ہوں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی کرکٹرز نے بغیر تماشائیوں کے دبئی میں بہت کرکٹ کھیلی، جب ملک میں کرکٹ واپس آئی تو شروع میں ہوٹل اور گراؤنڈ تک ہی محدود رہے۔ ایک وقت تھا کہ لوگ کہتے تھے کہ پاکستان کے ٹور میں پلیئرز گراؤنڈ اور ہوٹل تک محدود رہیں گے اور اب ایسی ہی صورتحال پوری دنیا میں ہوگئی ہے۔تاہم نئے ایس او پیز کی پابندی پاکستانی کرکٹرز کیلئے نئی ضرور ہوگی۔

اظہر علی کہتے ہیں کہ جن چیزوں کو بچپن سے کرتے آرہے ہیں اس کو نہ کرنا مشکل ضرور ہے لیکن گزشتہ دو ماہ کے دوران ہر کوئی ایس او پی کی پابندی کا عادی بن چکا ہے اس لیے ہر کسی کے ذہن میں احتیاطی تدابیر موجود ہیں۔

‘انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز کی سیریز سے پاکستانی کرکٹرز کو اندازہ لگانے کا موقع مل جائے گا’

آئی سی سی کی نئی گائیڈ لائنز میں پلیئرز نہ تو گیند کو چمکانے کیلئے تھوک کا استعمال کرسکیں گے اور نہ ہی کامیابی پر تالی ماریں گے اور نہ ہی گلے مل سکیں گے تاہم اظہر علی کے مطابق انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز کی سیریز میں پاکستانی کرکٹرز کو یہ اندازہ لگانے کا موقع مل جائے گا کہ ان ساری گائیڈ لائنز میں کرکٹ کس طرح ہورہی ہے۔

اظر علی کا یہ بھی ماننا ہے کہ انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز کی سیریز جہاں پاکستان کو چیزوں کے مشاہدے کا موقع دے گی وہیں وہ انگلش پلیئرز کو ان تمام صورتحال سے ایڈجسٹ ہونے کا موقع بھی دے دے گی جن کا ٹیموں کو سامنا ہوگا جو پاکستان کیلئے ایک ڈس ایڈوانٹج ہوسکتا ہے۔

ایک سوال پر پاکستان ٹیم کے کپتان نے کہا کہ قومی کرکٹرز سیریز کیلے کافی مثبت ہیں اور کرکٹ کے میدانوں میں واپسی کیلئے پر جوش، کرکٹ کی واپسی نہ صرف فینز بلکہ کرکٹرز کیلئے بھی ضروری ہے، مثبت بات یہ ہے کہ کھلاڑیوں کو طویل عرصہ کرکٹ سے دور نہیں رہنا پڑا کیوں کہ طویل عرصہ دوری میں کئی پلیئرز کے کیریئر کا اہم سال ضائع ہوسکتا تھا۔

حارث سہیل کی عدم موجودگی میں فواد عالم کا چانس بن سکتا ہے، اظہر علی

تین ٹیسٹ میچز کی سیریز کی اہمیت پر بات کرتے ہوئے اظہر علی کا کہنا تھا کہ یہ ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کا حصہ ہیں اور پاکستانی کرکٹرز اس سیریز میں قیمتی پوائنٹس حاصل کرنے کیلئے پرعزم ہیں۔

اظہر علی کا کہنا تھا کہ طویل اسکواڈ اور ریڈ بال اسپیشلسٹ لے جانے کا مقصد ہی ہے کہ لمبے قیام کے دوران کوئی بھی مسئلہ ہوا تو فوری متبادل دستیاب ہو۔ قومی کپتان نے کہا کہ اس بار پاکستانی ٹیم سیریز ڈرا نہیں کرے گی بلکہ جیت کر واپس آے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ حارث سہیل کی عدم موجودگی میں فواد عالم کا چانس بن سکتا ہے، فواد نے کافی لمبا انتظار کرلیا ، اس کے ٹیلنٹ پر کسی کو شک نہیں اور اگر ٹیم چھ بیٹسمینوں کے ساتھ میدان میں اترتی ہے تو فواد عالم کے فائنل الیون میں شامل ہونے کا چانس بن سکتا ہے۔

پاکستان کی جانب سے 78 ٹیسٹ میچز میں پانچ ہزار نو سو انیس رنز بنانے والے اظہر علی کا کہنا تھا کہ انگلینڈ سے سیریز میں ان کا ذاتی ہدف ہے کہ لمبا اسکور کریں، تین میچز کی سیریز میں کم از کم دو سنچریاں کرنے کی خواہش ہے اور امید ہے کہ ٹیم کی جیت میں اہم کردار ادا کریں۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »