تازہ ترین
ٹرک سے 400 کلو سے زائد چرس بر آمد، ملزم گرفتارافسران کے تبادلے کا معاملہ، وزیراعلیٰ سندھ کی افسران کو چارج نہ چھوڑنے کی ہدایتعمران خان کی حکومت گرانے کیلیے تمام آئینی وقانونی راستے اختیار کرینگے، پیپلز پارٹیطالبان نے بدھا مجسموں کی جگہ اور قدیم یادگاروں کو سیاحت کیلئے کھول دیاروپے کی قدر میں زبردست کمی کے باوجود درآمدات بڑھ رہی ہیں، میاں زاہد حسینعاصمہ جہانگیر فاؤنڈیشن نے نوازشریف کی تقریر پرحکومتی تنقید مسترد کردیائیرپورٹ پر مسافر کے بیگ سے کروڑوں روپے کی ہیروئن برآمدکراچی سمیت سندھ میں سی این جی اسٹیشنز کو ڈھائی ماہ کیلئے کی فراہمی بندججز کے سیمینار میں چیف گیسٹ اسے بلایا گیا جسے سپریم کورٹ نے سزا دی: وزیراعظمیو اے ای میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کردی گئیآڈیو لیک: فرض کریں ٹیپ درست ہے تو اصل کلپ کس کے پاس ہے؟جسٹس اطہر من اللہ’کورونا کے نئے ویرینٹ کا علم نہیں، تعلیمی سرگرمیاں جاری رکھنا چاہتے ہیں‘عمران خان کو نوجوان اقتدار میں لائے تھے وہی بھگائیں گے، سراج الحقاومی کرون سے متاثرہ مریضوں میں معمولی علامات ہیں، جنوبی افریقا میڈیکل ایسوسی ایشنمال و دولت نہیں بلکہ تعلیم سب سے بڑی نعمت ہے، محمد حسین محنتیحکومت نے آئی ایم ایف شرائط کے تحت منی بجٹ لانے کا فیصلہ کرلیااین اے 133 ضمنی الیکشن: ووٹرز سے قرآن پر حلف لیکر ووٹ خریدنے کے الزاماتگرین لائن منصوبہ کب آپریشنل ہو گا؟ اسد عمر نے کراچی والوں کو خوشخبری سنا دیمال دولت نہیں انسان کے اندر غیرت ضروری ہے، وزیراعظماومی کرون وائرس کا خدشہ: سندھ میں بوسٹر ڈوز لازمی قرار

پاکستانی کرنسی کئی ابھرتی ہوئی معیشتوں کے مقابلہ میں مستحکم ہے: میاں زاہد حسین

فائل فوٹو

ایف پی سی سی آئی بزنس مین پینل کے سینئر وائس چیئرمین ،پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولز فور م وآل کراچی انڈسٹریل الائنس کے صدر اور سابق صوبائی وزیر میاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں کمی پر تشویش ہے ۔ مرکزی بینک روپے کے زوال کو روکنے کی کوششیں بڑھائے تاکہ عوام اور کاروباری برادری سکھ کا سانس لے سکیں ۔ کرنسی کی قدر کم ہونے سے برآمدات کو کچھ سہارا ملے گا مگردرآمدات مہنگی ہو جائیں گی جو درآمدات سے دگنی ہیں اور غیر ملکی قرضہ بڑھ جائے گا ۔ اس سے دیامر بھاشا ڈیم سمیت تمام منصوبوں کی لاگت میں اضافہ، ایکسپورٹ انڈسٹری کے لئے خام مال مہنگا اور عمومی مہنگائی میں بھی اضافہ ہوجا ئے گا ۔ میاں زاہد حسین نے وومن چیمبر کراچی کی لیڈر محترمہ نازلی عابد، زہرہ زاہد،عروج فاطمہ جعفری اورجامشورو چیمبر آف کامرس کے لیڈر ریحان مہتاب چاءولہ سے گفتگو میں کہا کہ روپے کی قدر میں کمی تشویشناک ہے مگر یہ ترقی پذیر ممالک سے غیر ملکی سرمائے کے انخلاء کا نتیجہ ہے جس سے بہت سے ممالک متاثر ہوئے ہیں تاہم پاکستانی روپے کو دیگر ممالک کے مقابلہ میں کم نقصان پہنچا ہے جس کا سارا کریڈٹ گورنرا سٹیٹ بینک کی مثبت پالیسیوں کو جاتا ہے ۔ بیس جنوری سے چار مئی تک پاکستان روپے کی قدر میں 3.3 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ہے جبکہ اس دوران جنوبی افریقہ کی کرنسی کی قدر میں 21.6 فیصد، ترکی کی کرنسی کی قدر میں16.5 فیصد اور بھارتی روپے کی قدر میں 6.2 فیصد کمی آئی ہے اور دیگر ابھرتی ہوئی معیشتوں کی کرنسی بھی گر رہی ہے مگر بنگلہ دیش اور مصر کی کرنسی کی قیمت میں بہت کم کمی ریکارڈ کی گئی ہے ۔ 2008 کے عالمی معاشی بحران میں ابھرتی ہوئی معیشتوں سے تین ماہ میں 27ارب ڈالر نکالے گئے تھے جبکہ کرونا وائرس بحران میں ایک ماہ میں 59 ارب ڈالر نکالے گئے ہیں جس سے یہ ممالک بحران کا شکار ہو گئے ہیں ۔ پاکستان سمیت ان تمام ممالک میں مقامی اقتصادی سرگرمیاں بری طرح متاثر ہوئی ہیں اور کئی ممالک میں انکی فوری بحالی کا امکان کم ہے جس سے عوام کے مسائل میں اضافہ ہو رہا ہے ۔ پاکستان میں مارچ کے مہینے میں آٹو سیکٹر میں 69.6 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ہے، پیٹرولیم سیکٹر 31.4 فیصد سکڑ گیا ہے جسکی وجہ سے ملک بھر میں تیل کی سپلائی متاثر ہوئی ہے اور عوام متاثر ہو رہی ہے، سیمنٹ کی برآمدات میں کمی جبکہ مقامی فروخت میں 14.3 فیصد کمی آئی ہے ۔ اشیائے خورد و نوش کی برآمد میں 25.7 فیصد کمی، ہائی ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل برآمدات میں 15.3 فیصدجبکہ لو ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل کی برآمد میں 32.5 فیصد کمی آئی ہے ۔ ان حالات میں شرح سود میں مزید کمی ضروری ہو گئی ہے جس پر غور کیا جائے ۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »