تازہ ترین
این اے 133 ضمنی انتخاب، پی پی کو 2018 کے مقابلے میں 26ہزار728 ووٹ زیادہ ملےبھارتی ریاست ناگالینڈ میں سکیورٹی فورسز نے فائرنگ کر کے 13مزدور مار ڈالےآئی ایم ایف کی نئی شرائط ملکی اداروں کو گروے رکھنے کے مترادف ہے، محمد حسین محنتیوہاڑی واقعہ، عثمان بزدار کی قائداعظم کے مجسمے پر فوری طورپر عینک لگانے کی ہدایتمنی لانڈرنگ کیس: جیکولین فرنینڈس کو بھارت سے باہر جانے سے روک دیا گیاگوادر کوقومی اور بین الاقوامی مافیاز کے رحم وکرم پر نہیں چھوڑیں گے، سراج الحقوزیراعظم کا پریانتھا کمارا کو بچانےکی کوشش کرنیوالے شخص کیلئے تمغہ شجاعت کا اعلانپریمئیر لیگ کرکٹ ٹورنامنٹ میں ملک بھر سے 12 ٹیموں کے 200 پلئرز نے حصہ لیاتیز رفتارگاڑی نے 4 بچوں کوکچل دیا، ایک بچہ جاں بحقاسسٹنٹ کمشنر کو فائرنگ کرکے قتل کردیا گیادنیا کی معمر ترین ٹیسٹ کرکٹر ایلین ایش110سال کی عمر میں انتقال کر گئیں’وزیراعظم 10 دسمبر کو کراچی کے پہلے جدید ترین ٹرانسپورٹ سسٹم کا افتتاح کریں گے‘ٹائر پھٹنے پر مسافروں کا طیارے کو دھکا لگانے کا انوکھا واقعہپاکستان سمیت دنیا بھر میں آج سندھی ثقافتی دن منایا جارہاہےلڑکی سے زیادتی کے الزام میں گرفتار سینئر سول جج ضمانت پر رہاسیالکوٹ واقعہ: گرفتار افراد میں سے 13 اہم ملزمان کی شناخت، تصاویر جاریملک میں قرآن و سنت جمہوریت و آئین کی بالادستی کیلئے اچھی قیادت کو آگے لانا ہوگا۔ لیاقت بلوچلاقانونیت اور کرپشن نے ملک کو کھوکھلا کر دیا، سراج الحقایک شخص مشتعل ہجوم سے پریانتھا کمارا کو بچانےکی تن تنہا کوشش کرتا رہاملک میں سونا 600 روپےفی تولہ سستا ہوگیا

لینڈ مافیا اور افسران کے مبینہ گٹھ جوڑ سے ایک ارب سے زائد مالیت کی اراضی جعلسازی سے ہڑپ کرنیکا منصوبہ بے نقاب

لینڈ مافیا اور افسران کے مبینہ گٹھ جوڑ سے ایک ارب40کروڑ سے زائد مالیت کی اراضی جعلسازی سے ہڑپ کرنیکا منصوبہ بے نقاب ہوگیا،گلشن معمار ہاﺅسنگ اسکیم کی18ایکٹر اراضی پر سرکاری سرپرستی میں قبضہ کئے جانے کا انکشاف،ڈپٹی کمشنر غربی،اسسٹنٹ کمشنر اور مختیار کار منگھوپیر سمیت اینٹی انکروجمنٹ پولیس کے افسران پر لینڈ مافیا کی سہولت کاری کا الزام،ملیر ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو،کمشنر کراچی،ڈپٹی کمشنر ویسٹ سمیت ڈی آئی جی ایسٹ زون کو قیمتی اراضی پر قبضے اور سہولت کاروں کیخلاف کارروائی کیلئے لیٹر ارسال کردیا،تفصیلات کے مطابق گلشن معمار ہاوسنگ اسکیم میں واقع 18 ایکڑرقبے پر محیط قیمتی اراضی پر قبضہ شروع کردیا گیا ہے،ذرائع کا کہنا ہے کہ مذکورہ زمین ٹمبر مارکیٹ کے لئے حنیف میمن نامی شخص کو 15 سال قبل الاٹ کی گئی تھی،متاثرہ سفاری بلڈر نے ڈپٹی کمشنر غربی اور سرکاری سرپرستی میں اپنی اراضی پر کئے جانے والے قبضے سے ملیر ڈیولپمنٹ اتھارٹی کو آگاہ کیا جس کے بعد ایم ڈی اے محکمہ اسٹیٹ اینڈ انفورسمنٹ نے مذکورہ صورتحال کے حوالے سے سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو،کمشنر کراچی،ڈپٹی کمشنر غربی اور ڈی آئی جی ایسٹ زون کو لیٹر ارسال کیا جس میں آگاہ کیا ہے کہ مذکورہ اراضی پہلے ہی الاٹ شدہ ہے جس پر ایم ڈی اے کو مطلع کئے بغیر ہی سرکاری سرپرستی میں قبضہ کیا جارہا ہے، ذرائع کے مطابق مذکورہ اراضی پر انتہائی منظم انداز سے قبضہ کرنے کیلئے ڈپٹی کمشنر ویسٹ،اسسٹنٹ کمشنر اور مختیار کار سمیت علاقہ پولیس کو اعتماد میں لیا گیااور14مئی 2020ءکو ڈپٹی کمشنر غربی،اسسٹنٹ کمشنرغربی،مختیار کاراوراینٹی انکروجمنٹ پولیس نے مذکورہ اراضی پر غیر قانونی طور پر ڈیمالیشن ایکشن کرکے لینڈ مافیا کی مبینہ سہولت کاری کی ہے،ملیر ڈیولپمنٹ اتھارٹی ڈائریکٹر اسٹیٹ انفورسمنٹ کی جانب سے مذکورہ اراضی پر کئے گئے قبضے کے حوالے سے لیٹر میں اعلی حکام سے درخواست کی گئی ہے کہ اراضی پر قبضے میں ملوث مختیار کار،علاقہ ٹپے دار سمیت دیگر ملوث افراد کیخلاف کارروائی عمل میں لائی جائے،دوسری طرف ذرائع کا کہنا ہے کہ قیمتی اراضی کی جعلسازی سے فروخت کا بڑا منصوبہ بنایا گیا ہے اراضی کی مالیت ایک ارب40کروڑ سے زائد مالیت کی بتائی جاتی ہے،مذکورہ اراضی پر قبضے کے بعد تیزی سے تعمیراتی کام شروع کردیا گیا ہے جبکہ علاقہ پولیس اور اینٹی انکروجمنٹ پولیس پراسرار خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »