تازہ ترین
دریائے سندھ کی 3 ڈولفنز کو سیٹلائٹ ٹیگس لگاکر دریا میں چھوڑ دیا گیاصدارتی نظام کا شوشہ حکومتی ناکامی اور مہنگائی سمیت عوام کے سلگتے مسائل سے توجہ ہٹانے کی کوشش ہے، محمد حسین محنتیایک ہفتے میں 24 اشیا کی قیمتوں میں اضافہ، مہنگائی کی شرح 19.36 فیصد پرآگئیلمس: ملازمین کے کاموں میں سکندر جونیجو، سرفراز میمن ودیگر رکاوٹ اور بلیک میلنگ کر رہے ہیں: قلندر بخش بوزدارکراچی کی ضروریات کونظراندازکرنا کمزورمعیشت سے کھیلنے کے مترادف ہے، میاں زاہد حسینشرمیلا کی والدہ سے کیا ان کے بینک اکاؤنٹس کا پوچھتی؟ نادیہ خانڈکیتی کے کیس میں شوہر کے سامنے خاتون سے زیادتی کا بھی انکشافلاہور: انار کلی بازار دھماکے کیلئے کتنے دہشتگرد آئے؟ تفصیلات سامنے آ گئیںگرل فرینڈ کی ماں کو گردہ عطیہ کرنے والے شخص کو دھوکا، لڑکی نے کسی اور سے شادی کرلیبھیک مانگنے والی لڑکی پر دکاندار نےگرم گھی پھینک دیاجماعت اسلامی کی جانب سے لاہور بم دھماکے کی مذمتناقص پلاننگ اور تاخیر سےکیےگئے فیصلے سانحہ مری کی اہم وجہ ہیں، تحقیقاتی رپورٹکراچی میں تیسری شاہ اکیڈمی کرکٹ پریمئیر لیگ شروع، چار ٹیموں کے درمیان دلچسب مقابلےپانچ شہروں سے متعلق ریڈالرٹ جاری کیا ہوا ہے، شیخ رشیدکنزیومر موومنٹ غریب عوام کی داد رسی کے لیے جنگی بنیادوں پر کام کرے، محمد حسین محنتیمسلم ممالک ہماری حکومت کو تسلیم کریں، افغان وزیراعظمپریانتھا کو کس نے قینچی ماری اور کس نے لاش جلائی؟ 7 مرکزی ملزمان کا پتا چل گیالاہور میں دھماکا، ایک شخص جاں بحق اور متعدد زخمیایران کے ساتھ مذاکرات پر ہار ماننے کا وقت نہیں، امریکی صدرپاکستان کی پہلی خواجہ سرا ڈاکٹر سارہ گل نے ملک میں ایک نئی تاریخ رقم کی ہے، سعید غنی

کابل اسپتال حملہ: خاتون نے 20 نومولود بچوں کو دودھ پلانے کی ذمہ داری سنبھال لی

کابل: کابل میں میں اسپتال پر دہشت گرد حملے کے بعد خاتون نے 20 نومولود بچوں کو دودھ پلانے کی ذمہ داری سنبھال لی۔

رپورٹ کے مطابق افغان دارالحکومت کابل میں ایک اسپتال پر ہونے والے حملے کے بعد خاتون نے 20 نومولود بچوں کو دودھ پلانے کی ذمہ داری سنبھالی ہے۔رواں ہفتے حملہ آوروں نے کارروائی کے دوران نومولود بچوں، نرسوں اور خواتین کو قتل کر دیا تھا۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق فیروزہ یونس عمر نے ان بچوں کو دودھ پلانے کی ذمہ داری سنبھالی ہے جن کی مائیں اس واقعے میں جاں بحق ہو گئی تھی۔اس واقعے کے بعد کئی افسوسناک کہانیاں بھی سامنے آ رہی ہیں۔ کابل کے میٹرنٹی اسپتال پر دہشت گرد حملے میں ایک ایسا بچہ بھی جاں بحق ہو ا جو سات سال کی دعاؤں کے بعد ماں کی گود میں آیا تھا۔

میڈیارپورٹس کے مطابق ستائیس سالہ زینب نے بتایا کہ اس نے اپنے بچے کے لیے سات سال دعائیں کیں، منگل کی صبح وہ پیدا ہوا تو اس کا نام اٴْمید رکھا۔

زینب نے بتایا کہ بچے کی پیدائش کے بعد وہ اپنے آبائی علاقے بامیان جانے کی تیاری کر رہے تھے کہ تین افراد پولیس اہل کاروں کے بھیس میں میٹرنٹی وارڈ میں داخل ہوئے اور اندھا دھند فائرنگ شروع کر دی۔ جاں بحق ہونے والے بچے کی ماں نے بتایا کہ فائرنگ سے بچہ جاں بحق ہو گیا جسے دٴْنیا میں آئے صرف چار گھنٹے ہوئے تھے ۔کابل میں جس میٹرنٹی اسپتال پر حملہ کیا گیا اسے ڈاکٹروں کی رفاہی تنظیم ڈاکٹرز ودآؤٹ بارڈرز چلاتی ہے۔

پاکستان میں کئی سیاستدانوں نے کابل، افغانستان میں بچوں اور عورتوں پر ہونے والے بم دھماکوں کی شدید مذمت کی ہے۔اور کہا ہے کہ ایک ایسے وقت پر جب افغانستان سمیت پوری دنیا کورونا وبا سے پھیلنے والی عالمی وبا سے نبرد آزما ہے سفاکانہ حملے انسانیت کی توہین ہیں۔ ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری نے ایک مذہمتی بیان میں انھوں نے کہا کہ وہ کابل میں دو مختلف واقعات میں زچگی والی خواتین، نومولود بچوں، جنازہ میں اور ہیلتھ ورکرز پر رمضان المبارک کے مقدس اور بابرکت مہینے میں حملوں کی شدید مذمت کرتے ہیں، جنازوں کے شرکاء، میٹرنٹی وارڈز، معصوم بچوں پر حملے انتہائی وحشیانہ، سفاکانہ اور شیطانی عمل ہیں، جنگلوں میں بھی اصول ہوتے ہیں۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »