تازہ ترین
این اے 133 ضمنی انتخاب، پی پی کو 2018 کے مقابلے میں 26ہزار728 ووٹ زیادہ ملےبھارتی ریاست ناگالینڈ میں سکیورٹی فورسز نے فائرنگ کر کے 13مزدور مار ڈالےآئی ایم ایف کی نئی شرائط ملکی اداروں کو گروے رکھنے کے مترادف ہے، محمد حسین محنتیوہاڑی واقعہ، عثمان بزدار کی قائداعظم کے مجسمے پر فوری طورپر عینک لگانے کی ہدایتمنی لانڈرنگ کیس: جیکولین فرنینڈس کو بھارت سے باہر جانے سے روک دیا گیاگوادر کوقومی اور بین الاقوامی مافیاز کے رحم وکرم پر نہیں چھوڑیں گے، سراج الحقوزیراعظم کا پریانتھا کمارا کو بچانےکی کوشش کرنیوالے شخص کیلئے تمغہ شجاعت کا اعلانپریمئیر لیگ کرکٹ ٹورنامنٹ میں ملک بھر سے 12 ٹیموں کے 200 پلئرز نے حصہ لیاتیز رفتارگاڑی نے 4 بچوں کوکچل دیا، ایک بچہ جاں بحقاسسٹنٹ کمشنر کو فائرنگ کرکے قتل کردیا گیادنیا کی معمر ترین ٹیسٹ کرکٹر ایلین ایش110سال کی عمر میں انتقال کر گئیں’وزیراعظم 10 دسمبر کو کراچی کے پہلے جدید ترین ٹرانسپورٹ سسٹم کا افتتاح کریں گے‘ٹائر پھٹنے پر مسافروں کا طیارے کو دھکا لگانے کا انوکھا واقعہپاکستان سمیت دنیا بھر میں آج سندھی ثقافتی دن منایا جارہاہےلڑکی سے زیادتی کے الزام میں گرفتار سینئر سول جج ضمانت پر رہاسیالکوٹ واقعہ: گرفتار افراد میں سے 13 اہم ملزمان کی شناخت، تصاویر جاریملک میں قرآن و سنت جمہوریت و آئین کی بالادستی کیلئے اچھی قیادت کو آگے لانا ہوگا۔ لیاقت بلوچلاقانونیت اور کرپشن نے ملک کو کھوکھلا کر دیا، سراج الحقایک شخص مشتعل ہجوم سے پریانتھا کمارا کو بچانےکی تن تنہا کوشش کرتا رہاملک میں سونا 600 روپےفی تولہ سستا ہوگیا

قادیانی آئین پاکستان کے باغی ہیں،آئین انہیں غیر مسلم قرار دیتا ہے: سراج الحق

امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ قادیانی آئین پاکستان کے باغی ہیں ،آئین انہیں غیر مسلم قرار دیتا ہے مگر یہ تسلیم کرنے کو تیار نہیں ،حکمران اسلام اور آئین پاکستان کے باغیوں کو اقلیتی کمیشن میں شامل کرکے آگ سے کھیل رہے ہیں۔

ہمیں ایساکوئی کمیشن منظور نہیں جس میں قادیانی شامل ہوں۔قوم ختم نبوت کی حفاظت کیلئے ہر قربانی دینے کو تیار ہے۔

قادیانیوں کو اقلیتی کمیشن میں شامل کرنے کی تجویز کہاں سے اور کس کے ذریعے آئی ،تحقیقات ہونی چاہئیں ۔قادیانیوں کو اعلیٰ مناصب دینے اور ان کی سرپرستی کرنے والوں کو قوم معاف نہیں کرے گی۔قادیانی آئین پاکستان کے خلاف سازشوں میں مصروف ہیں ۔قوم ختم نبوت کی چوکیدار،اقلیتی کمیشن میں قادیانیوں کی مجوزہ شمولیت کے خلاف سینیٹ اور قومی اسمبلی میں آواز اٹھائیں گے ۔کرونا کی وجہ سے قوم پہلے ہی بڑی مشکل میں ہے ،ہر طر ف مسائل ہی مسائل ہیں ۔حکومت ہوش کے ناخن لے اور ملک و قوم کے لئے نئے مسائل کھڑے نہ کرے ۔ حکمران عوام کا استحصال کررہے ہیں ،مہنگائی ،ذخیرہ اندوزی کرنے والے حکومتی صفوں میں موجود ہیں ۔چینی بحران میں حکومتی پارٹی کے ایک فردنے ساڑھے تین ارب روپے سے زیادہ کمائے ۔خود سرکار کے لوگ ہی اژدھے بن کر عوام کا خون چوس رہے ہیں ۔ رمضان المبار ک میں الخدمت کی ریلیف کی سرگرمیوں میں تیز ی آئی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گلشن راوی میں الخدمت کے ریلیف کیمپ کے دورہ کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پرامیر لاہور ڈاکٹر ذکراللہ مجاہد سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف اور جے آئی یوتھ کے سیکرٹری جنرل شاہد نوید ملک بھی موجود تھے ۔

سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ کورونا وبا کے دوران الخدمت فاﺅنڈیشن کے رضاکاروں اور جے آئی یوتھ کے نوجوانوں نے ثابت کردیا ہے کہ وہ واقعی قوم کی خدمت کرسکتے ہیں ۔عوام الناس کی خدمت کے جذبے سے سرشار ایسے نوجوان ہی قوموں کی امیدوں کا مرکز ہوتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ شاہد نوید ملک اور ان کی ٹیم روزانہ سینکڑوں گھروں تک راشن اور تازہ سبزیاں پہنچانے کا جو منفرد کارنامہ سرانجام دیا ہے میں اس پر انہیں شاباش دیتا ہوں اور امید کرتا ہوں کہ یہ ٹیم اسی جوش و جذبے سے اپنی امدادی سرگرمیاں جاری رکھے گی۔ انہوں نے ہدایت کی کہ آپ کے علاقوں میں کوئی گھر ایسا نہیں ہونا چاہئے جو امداد کا مستحق ہواور سے امداد نہ پہنچی ہو ۔انہوں نے کہا کہ اصل نیکی یہی ہے کہ اللہ کی مخلوق کی خدمت کی جائے اور انسانیت جو اللہ کا کنبہ ہے اس کی بھوک اور پیاس مٹانے کا انتظام کیا جائے ۔

سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ موجودہ فرسودہ نظام سوائے پریشانیوں کے کچھ نہیں دے سکتا۔ہم ملک میں ظلم وجبر اور استحصال سے پاک نظام چاہتے ہیں ۔ایسا نظام جس میں غریب کو انصاف ،تعلیم ،علاج اور کاروبار کے یکساں مواقع مل سکیں۔جہاں عدالتوں میں قرآن کےمطابق فیصلے ہوں ،سود سے پاک معیشت ہو،زکواة اور عشر کا پاکیزہ اور غریب پر ور معاشی نظام ہو،جہاں نیکی کرنا آسان اور گناہ مشکل ہو،ایسانظام جس میں حلال کھانا آسان اور حرام کمانا مشکل ہو۔انہوں نے کہا کہ ہم ایسے معاشرے کی تشکیل کی جدوجہد کررہے ہیں جو اجتماعی تقویٰ کی بنیاد پر وجود میں آئے ،جس میں خوف خدا ہو،جس میں دولت کے پجاری ،بخیل اور شاہ خرچیوں میں مگن رہنے والے نہ ہوں بلکہ غریبوں ،ناداروں ،بیواﺅں اور یتیموں کی کفالت کرنے والے ہوں ۔انہوں نے کہاکہ دل میں خوف خدا نہ ہو تو محض ڈنڈے کے زور پر کسی کی اصلاح نہیں ہوسکتی۔رمضان المبار ک ہمیں انفرادی اور اجتماعی تقویٰ کا درس دیتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ معاشرے میں موجود پریشانیوں ،مسائل اور مصائب سے نکلنے کا ایک ہی حل ہے کہ ملک میں نظام مصطفی ﷺ کا نفاذ ہو۔ملک میں قرآن و سنت کے متصادم نظام کی وجہ سے آج ہر طرف ظلم وجبر مایوسی اور ناامیدی نے ڈیرے ڈال رکھے ہیں۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »