تازہ ترین
این اے 133 ضمنی انتخاب، پی پی کو 2018 کے مقابلے میں 26ہزار728 ووٹ زیادہ ملےبھارتی ریاست ناگالینڈ میں سکیورٹی فورسز نے فائرنگ کر کے 13مزدور مار ڈالےآئی ایم ایف کی نئی شرائط ملکی اداروں کو گروے رکھنے کے مترادف ہے، محمد حسین محنتیوہاڑی واقعہ، عثمان بزدار کی قائداعظم کے مجسمے پر فوری طورپر عینک لگانے کی ہدایتمنی لانڈرنگ کیس: جیکولین فرنینڈس کو بھارت سے باہر جانے سے روک دیا گیاگوادر کوقومی اور بین الاقوامی مافیاز کے رحم وکرم پر نہیں چھوڑیں گے، سراج الحقوزیراعظم کا پریانتھا کمارا کو بچانےکی کوشش کرنیوالے شخص کیلئے تمغہ شجاعت کا اعلانپریمئیر لیگ کرکٹ ٹورنامنٹ میں ملک بھر سے 12 ٹیموں کے 200 پلئرز نے حصہ لیاتیز رفتارگاڑی نے 4 بچوں کوکچل دیا، ایک بچہ جاں بحقاسسٹنٹ کمشنر کو فائرنگ کرکے قتل کردیا گیادنیا کی معمر ترین ٹیسٹ کرکٹر ایلین ایش110سال کی عمر میں انتقال کر گئیں’وزیراعظم 10 دسمبر کو کراچی کے پہلے جدید ترین ٹرانسپورٹ سسٹم کا افتتاح کریں گے‘ٹائر پھٹنے پر مسافروں کا طیارے کو دھکا لگانے کا انوکھا واقعہپاکستان سمیت دنیا بھر میں آج سندھی ثقافتی دن منایا جارہاہےلڑکی سے زیادتی کے الزام میں گرفتار سینئر سول جج ضمانت پر رہاسیالکوٹ واقعہ: گرفتار افراد میں سے 13 اہم ملزمان کی شناخت، تصاویر جاریملک میں قرآن و سنت جمہوریت و آئین کی بالادستی کیلئے اچھی قیادت کو آگے لانا ہوگا۔ لیاقت بلوچلاقانونیت اور کرپشن نے ملک کو کھوکھلا کر دیا، سراج الحقایک شخص مشتعل ہجوم سے پریانتھا کمارا کو بچانےکی تن تنہا کوشش کرتا رہاملک میں سونا 600 روپےفی تولہ سستا ہوگیا

ساری معیشت متاثر ہوئی ہے، چھوٹے اور درمیانے سمیت تمام شعبوں کو پیکیج دیا جائے, میاں زاہد حسین

ایف پی سی سی آئی بزنس مین پینل کے سینئر وائس چیئرمین، پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولز فور م وآل کراچی انڈسٹریل الائنس کے صدر اور سابق صوبائی وزیر میاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ کورونا وائرس، عالمی کساد بازاری اور ملکی حالات سے تمام شعبے متاثر ہوئے ہیں اس لئے ملکی معیشت کے تمام شعبوں کو امدادی پیکیج دیا جائے ۔

کاروبار کی بندش کی وجہ سے 5500 ارب کے ابتدائی ہدف کے مقابلہ میں 3500 ارب روپے سے زیادہ ٹیکس کی وصولی ناممکن ہے ۔ میاں زاہد حسین نے بزنس کمیونٹی سے گفتگو میں کہا کہ وباء سے پہلے محاصل میں 700 ارب روپے تک کی کمی کا امکان بتایا گیا تھا،موجودہ بحران کے پیش نظراس میں مزید کمی کا امکان ہے ۔ انھوں نے کہا کہ اب ہدف میں مزید کمی کر کے اسے 3908 ارب کر دیا گیا ہے جس کا حصول بھی مشکل ہے ۔ محاصل کے نقصان کو پورا کرنے کے لئے منی بجٹ یا دیگر سخت اقدامات کے اندیشے نے کاروباری برادری کی نیندیں اڑا دی ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ حکومت نے کنسٹرکشن انڈسٹری سے بجا طور پر توقعات وابستہ کی ہیں ۔ اس پیکیج میں سب سے بڑی خوبی یہ ہے کہ اسے بناتے ہوئے نجی شعبہ سے مشاورت کی گئی جسے زمینی حقائق کا بخوبی علم ہوتا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ پیکیج میں غریب عوام اور مڈل کلاس کی ضروریات کاکسی حد تک خیال رکھا گیا ہے ۔ اس تعمیراتی پیکیج میں بلڈرز اور خریداروں کو ایمنسٹی دی گئی ہے مگر فروخت کنندگان کو کوئی معافی نہیں ملی ہے ۔ پراپرٹی کے خریدار مکمل دستاویز بندی کو ترجیح دینگے تاکہ ان کا زیادہ سے زیادہ سرمایہ سفید ہو سکے جبکہ فروخت کنندہ جسے کوئی تحفظ نہیں دیا گیا ہے جو پراپرٹی کی ویلیو کو کم از کم دکھانے کی کوشش کرے گا جس سے تنازعہ جنم لے گا ۔ ایسی صورتحال سے نمٹنے کا واحد ذریعہ یہ ہے کہ پیکیج میں موجودہ سقم بلا تاخیر دور کئے جائیں اور رئیل اسٹیٹ سیکٹر سے بھی مشاورت کرکے پیکیج کو بہتر بنا یا جائے ۔ انھوں نے کہا کہ معیشت کو دلدل سے نکالنے کے لئے نجی شعبہ سے بھرپور مشاورت شروع کی جائے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباروں کی مالی مشکلات ختم کرنے کےلئے فوری پیکیج دیا جائے ،بجلی اور گیس کے بلوں کو3ماہ کےلئے موخر کیا جائے اور12اقساط میں وصولی کی جائے یابلوں کی ادائیگی کےلئے اسٹیٹ بینک سے بلا سود قرضہ فراہم کیا جائے ۔ تمام معاملات میں کاروباری برادری سے بھی رہنمائی لینے کی ضرورت ہے تاکہ کامیابی کو یقینی بنایا جا سکے اور اس میں کسی قسم کی تاخیر ملک و قوم کے مفاد میں نہیں ہے ۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »