تازہ ترین
این اے 133 ضمنی انتخاب، پی پی کو 2018 کے مقابلے میں 26ہزار728 ووٹ زیادہ ملےبھارتی ریاست ناگالینڈ میں سکیورٹی فورسز نے فائرنگ کر کے 13مزدور مار ڈالےآئی ایم ایف کی نئی شرائط ملکی اداروں کو گروے رکھنے کے مترادف ہے، محمد حسین محنتیوہاڑی واقعہ، عثمان بزدار کی قائداعظم کے مجسمے پر فوری طورپر عینک لگانے کی ہدایتمنی لانڈرنگ کیس: جیکولین فرنینڈس کو بھارت سے باہر جانے سے روک دیا گیاگوادر کوقومی اور بین الاقوامی مافیاز کے رحم وکرم پر نہیں چھوڑیں گے، سراج الحقوزیراعظم کا پریانتھا کمارا کو بچانےکی کوشش کرنیوالے شخص کیلئے تمغہ شجاعت کا اعلانپریمئیر لیگ کرکٹ ٹورنامنٹ میں ملک بھر سے 12 ٹیموں کے 200 پلئرز نے حصہ لیاتیز رفتارگاڑی نے 4 بچوں کوکچل دیا، ایک بچہ جاں بحقاسسٹنٹ کمشنر کو فائرنگ کرکے قتل کردیا گیادنیا کی معمر ترین ٹیسٹ کرکٹر ایلین ایش110سال کی عمر میں انتقال کر گئیں’وزیراعظم 10 دسمبر کو کراچی کے پہلے جدید ترین ٹرانسپورٹ سسٹم کا افتتاح کریں گے‘ٹائر پھٹنے پر مسافروں کا طیارے کو دھکا لگانے کا انوکھا واقعہپاکستان سمیت دنیا بھر میں آج سندھی ثقافتی دن منایا جارہاہےلڑکی سے زیادتی کے الزام میں گرفتار سینئر سول جج ضمانت پر رہاسیالکوٹ واقعہ: گرفتار افراد میں سے 13 اہم ملزمان کی شناخت، تصاویر جاریملک میں قرآن و سنت جمہوریت و آئین کی بالادستی کیلئے اچھی قیادت کو آگے لانا ہوگا۔ لیاقت بلوچلاقانونیت اور کرپشن نے ملک کو کھوکھلا کر دیا، سراج الحقایک شخص مشتعل ہجوم سے پریانتھا کمارا کو بچانےکی تن تنہا کوشش کرتا رہاملک میں سونا 600 روپےفی تولہ سستا ہوگیا

مریضوں کی ہوم آئیسولیشن سے کورونا وائرس کی مقامی منتقلی میں اضافہ

کراچی: کورونا وائرس سے متاثر ہونے والے مریضوں کی بڑی تعداد کو آئیسولیشن مراکز کے بجائے ہوم آئیسولیشن یعنی گھر میں تنہائی اختیار کرنے کی اجازت دینے سے وائرس کی مقامی منتقلی کے کیسز کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے۔
رپورٹ کے مطابق صوبے میں ایک ہزار 668 کیسز سامنے آئے جس میں سے ایک ہزار 97 کیس کراچی کے ہیں اور اس میں زیادہ تر یا تقریباً ایک ہزار 37 کیسز مقامی سطح پر منتقلی کے ہیں۔
ماہرین نے کہا ہے کہ حکومت کو روزِ اول سے تمام مریضوں کو اس مقصد کے لیے بنائے گئے آئیسولیشن سینٹر میں داخل کرنا چاہیئے تھا اور ان آئیسولیشن سینٹڑ کو اس حد تک بہتر بنانا چاہیئے تھا کہ اہلِ خانہ کو اپنے مریض کو داخل کروانے پر اعتراض نہ ہو۔
مقامی منتقلی کے بڑھتے ہوئے کیسز کی جانب اشارہ کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اس کی بڑی وجہ ان مریضوں کو قرار دیا جاسکتا ہے جن میں معمولی یا بہت کم علامات ظاہر ہوتی ہیں اور وہ طبی رہنمائی پر عمل نہیں کرتے۔
اس بارے میں بات کرتے ہوئے انڈس ہسپتال میں کووِڈ 19 کی سہولت کی نگرانی کرنے والی ماہرِ معتدی امراض ڈاکٹر ثمرین کا کہنا تھا کہ ’ہم ہسپتال میں محدود جگہ ہونے کی وجہ سے ایسے مریضوں کو داخل نہیں کرتے اور صرف تشویشناک مریضوں کو داخل کیا جاتا ہے۔
انہوں نے بتایا کہ معمولی علامتوں والے کچھ مریضوں کو ایکسپو سینٹر کے قرنطینہ سینٹر یا گڈاپ اور دنبہ گوٹھ کے سینٹرز میں بھجوادیا جاتا ہے یا انہیں گھر میں آئیسولیشن کے حوالے سے ہدایات پر سختی سے عمل کرنے کی ہدایت کی جاتی ہے۔
تاہم زیادہ تر مشاہدے میں یہ بات آئی ہے کہ عوام ان رہنما ہدایات پر عمل نہیں کرتے اور اپنے دوست احباب سے رابطہ رکھتے ہیں جس کے نتیجے میں اہلِخانہ اور دیگر افراد بھی وائرس سے متاثر ہوتے ہیں۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ عوام یہ سمجھنے سے قاصر ہیں کہ جب انہیں معمولی علامتیں ہیں تو اس بیماری کو خطرناک کیوں قرار دیا جارہا ہے۔
اسی طرح کے تحفظات کا اظہارپاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے ڈاکٹڑ عبدالغفور نے بھی کیا کہ ایکسپو سینٹر میں 12 سو بستروں پر مشتمل ہسپتال کو کورونا مریضوں کے لیے کیوں استعمال نہیں کیا جارہا ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ اس فیلڈ ہسپتال میں 50 سے بھی کم مریضوں کو رکھا گیا ہے جو انسانی اور مالی وسائل کا ضیاع ہے۔
ائیسولیشن سینٹرز کے حوالے سے عوام کے تحفظات پر بات کرتے ہوئے ڈاکٹر عبدالغفور نے بتایا کہ اس سلسلے میں حکومت کا کام ہے کہ عوام کے تحفظات کو دور کرے اور ان سہولیات کا معیار اتنا بہتر بنائے کہ مریض اور اس کے اہلخانہ آرامدہ محسوس کریں۔
ساتھ ہی انہوں نےکراچی کے سول ہسپتال میں 4 وارڈز کو کورونا مریضوں کے لیے مختص کرنے کے فیصلے پر تنقید کی اور کہا کہ ہسپتال میں آنے والے دیگر مریض کہاں جائیں گے۔
انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کو ان آئیسولیشن سینٹرز کو کووِڈ 19 کے مریضوں کے علاج کے لیے استعمال کرنا چاہیئے۔
دوسری جانب صوبائی محکمہ صحت کے ترجمان عاطف ویگھو کا کہنا تھا کہ ’ہم لوگوں کو ان آئیسولیشن سینٹرز میں داخل ہونے کے لیے مجبور نہیں کرسکتے، عوام ان جگہوں پر داخل نہیں ہونا چاہتے تاہم جن لوگوں سے گھروں میں آئیسولیشن اختیار کی ہے ضلعی صحت افسران ان سے رابطے میں ہیں اور روزانہ تفصیلات پوچھتے ہیں۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »