تازہ ترین
3 آنکھوں اور ناک میں 4 سوراخ والے بچھڑے کی پیدائشعمران خان نے پشاور میں پرویز خٹک کی تعریفوں کے پل باندھ دیےزلزلے نے تباہی مچا دی، 12 افراد جاں بحقحکومت پر تنقید کرنے پر پی ٹی آئی کا نور عالم خان کو شوکاز جاری کرنےکا فیصلہابوظبی میں ڈرون حملے کے بعد دھماکے، ایک پاکستانی سمیت 3 افراد ہلاکمعیشت میں مینوفیکچرنگ کا حصہ مسلسل گررہا ہے، میاں زاہد حسینہونے والے داماد کی 365 کھانوں سے آؤ بھگت کرنے والا خاندانمردوں کے باپ بننے کی صلاحیت کس عمر میں سب سے کم ہوتی ہے؟کراچی کے عوام نے دو روز قبل بھان متی کے قبیلہ کے لوگوں کے مظاہرے کو مسترد کردیا، سعید غنیکراچی: کورونا کیسز میں اضافہ، نجی اسکول نے پہلی سے پانچویں تک کلاسز بند کر دیںسعید غنی کی ہتک عزت کی درخواست پر پی ٹی آئی رہنما حلیم عادل پر فرد جرم عائدراولپنڈی میں شادی ہال کی لفٹ گرگئی، ایک شخص جاں بحق، متعدد زخمیسانحہ مری انتظامیہ کی غفلت سے پیش آیا، انکوائری کمیٹی کی رپورٹصدرمملکت نے ایف بی آر کی انتظامی ناانصافی پر بزرگ شہری سے معذرت کرلیجھوٹ اور غلط بیانی وفاقی وزراء کا وطیرہ بن چکا ہے، امتیاز شیخشریف فیملی حکومت سے چار لوگوں کیلئے ڈیل مانگ رہی ہے، شہباز گل کا دعویٰشہزادہ ہیری نے گارڈز واپس لینے کیلئے برطانوی حکومت کیخلاف مقدمے کی دھمکی دیدیانسٹا گرام اب ٹک ٹاک کو اپنے پلیٹ فارم پر شامل کرنے کو تیارمیں عمران نیازی کو رات کو ڈراؤنے خواب کی طرح آتا ہوں: شہباز شریففیکٹری میں زہریلی گیس پھیلنے سے چینی شہری ہلاک، 2 متاثر

کورونا کیلیے دوا کی قیمت خناق اور ریبیز کی ویکسین جیسی ہوگی: ماہر ڈاؤ یونیورسٹی

ڈاؤ یونیورسٹی کے ڈاکٹر شوکت علی کا کہنا ہے کہ کورونا کے علاج کی قیمت زیادہ نہیں ہوگی اور اس کی دوا کی قیمت خناق اور ریبیز کی ویکسین جیسی ہوگی۔
گزشتہ روز ترجمان ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائسنز نے دعویٰ کیا تھا کہ یونیورسٹی کورونا وائرس کے علاج کے لیے گلوبیولن تیار کرکے دنیا پر سبقت لے گئی ہے۔
ترجمان کا کہنا تھا کہ ڈاؤ یونیورسٹی کے ماہرین نے کورونا کے صحتیاب مریضوں کے خون سے حاصل شدہ اینٹی باڈیز سے انٹرا وینیس امیونو گلوبیولن( آئی وی آئی جی) تیار کرلی ہے جس کے ذریعے کورونا متاثرین کا علاج کیا جاسکے گا۔
اس متعلق نجی چینل کے مارننگ شو میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاؤ سے وابستہ ڈاکٹر شوکت علی نے کہا کہ ’ہم اس مرحلے پرپہنچ گئےہیں کہ صحتیاب مریض کے پلازما سے اینٹی باڈیز الگ کرسکتے ہیں، اینٹی باڈیزکو مزید شفاف بنا کرفارمولیشن بنا سکتے ہیں جو محفوظ بھی ہے‘۔
انہوں نے بتایا کہ ’کورونا کے علاج کے لیے سیفٹی اسٹڈی جانورپر کی گئی ہے، ہمیں اب ریگولیٹر اور صحت یاب مریضوں سے تعاون درکار ہوگا‘۔
ڈاکٹر شوکت کا کہنا تھا کہ ’کورونا کی دوائی کے لیے ریگولیٹرز کی شرائط سے آگاہ ہیں، کوشش ہے ریگولیٹرکی ضرورت جو بھی ہو اس کی تعمیل کرسکیں، ساتھ ہی ڈریپ کی ممکنہ مطلوبہ ضروریات پہلے سے مکمل کرلی ہے‘۔
انہوں نے مزید کہا کہ ‘دوا کی تیاری صحت یاب مریضوں کےخون کی دستیابی پرمنحصر ہے کیونکہ کورونا کے علاج کے لیے خام مال صحت یاب مریض کا پلازما ہوگا، زیادہ متاثرہ کیسز میں کوروناکے علاج کاطریقہ کاراستعمال کیا جائے گا‘۔
دوا کی قیمت سے متعلق ڈاکٹر شوکت نے بتایا کہ ’کورونا کے علاج کی قیمت زیادہ نہیں ہوگی، اس کی دوا کی قیمت خناق اور ریبیز کی ویکسین جیسی ہوگی‘۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »