تازہ ترین
نائیجر میں پاکستان کے سفیراحمد علی سروہی کی وزیر صنعت جیبو سلاماتو گوروزا ماگاگی سے ملاقاتکیوی وزیر اعظم نے کورونا کے باعث اپنی شادی ملتوی کر دیرضوان آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی کرکٹر آف دی ایئر قرارمسلم عقیدے کے سبب وزارتی ذمہ داریوں سے فارغ کیا گیا: برطانوی رکن پارلیمنٹمارٹرگولہ پھٹنے سے 4 افراد جاں بحقاغوا برائے تاوان کی وارداتوں میں ملوث جعلی کسٹم انسپکٹرگرفتارنوازشریف کو باہر بھیجنے کا فیصلہ 100 فیصد عمران خان کا تھا: اسد عمر29واں آل پاکستان شوٹنگ بال ٹورنامنٹ کا آغاز:70ٹیموں مد مقابل ہیںایلون مسک دماغی چپ کی انسانی جانچ کے قریبسندھ پولیس کے پاس واٹس ایپ کال ٹریس کرنے کی ٹیکنالوجی موجود نہ ہونے کا انکشافپپدریائے سندھ کی 3 ڈولفنز کو سیٹلائٹ ٹیگس لگاکر دریا میں چھوڑ دیا گیاصدارتی نظام کا شوشہ حکومتی ناکامی اور مہنگائی سمیت عوام کے سلگتے مسائل سے توجہ ہٹانے کی کوشش ہے، محمد حسین محنتیایک ہفتے میں 24 اشیا کی قیمتوں میں اضافہ، مہنگائی کی شرح 19.36 فیصد پرآگئیلمس: ملازمین کے کاموں میں سکندر جونیجو، سرفراز میمن ودیگر رکاوٹ اور بلیک میلنگ کر رہے ہیں: قلندر بخش بوزدارکراچی کی ضروریات کونظراندازکرنا کمزورمعیشت سے کھیلنے کے مترادف ہے، میاں زاہد حسینشرمیلا کی والدہ سے کیا ان کے بینک اکاؤنٹس کا پوچھتی؟ نادیہ خانڈکیتی کے کیس میں شوہر کے سامنے خاتون سے زیادتی کا بھی انکشافلاہور: انار کلی بازار دھماکے کیلئے کتنے دہشتگرد آئے؟ تفصیلات سامنے آ گئیںگرل فرینڈ کی ماں کو گردہ عطیہ کرنے والے شخص کو دھوکا، لڑکی نے کسی اور سے شادی کرلیبھیک مانگنے والی لڑکی پر دکاندار نےگرم گھی پھینک دیا

‘ملبے میں پھنسے افراد کے کل تک فون آتے رہے آج خاموشی ہے’

کراچی کے علاقے گولیمار میں تیسرے روز بھی گرنے والی عمارت کا ملبہ مکمل طور پر ہٹایا نہیں جاسکا،ملبے تلے اب بھی کئی افراد کے دبے ہونے کا خدشہ ہے جب کہ حادثے میں جاں بحق افراد کی تعداد 18 ہوچکی ہے۔

خیال رہے کہ 5 مارچ کو رضویہ سوسائٹی کے قریب گولیمار نمبر 2 میں تین رہائشی عمارتیں گرگئی تھیں جس کے باعث اب تک جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 18 ہوچکی ہے جب کہ 30 کے قریب افراد زخمی ہیں ۔

جاں بحق ہونے والوں میں 3 بچے،11 خواتین، اور اردویونیورسٹی کا ایک لیکچرار بھی شامل ہے۔
رپورٹ کے مطابق 40 گز کے پلاٹ پر بنی پانچ منزلہ عمارت پر اس کا مالک چھٹی منزل بھی بنا رہا تھا کہ پوری عمارت گر گئی جس کی زد میں دیگر دو عمارتیں بھی آگئیں۔

قریب موجود چوتھی عمارت کو بھی مخدوش قرار دیا گیا ہے۔ پاک فوج کے جوان اور دیگر ادارے ریسکیو آپریشن میں مصروف ہیں جب کہ تنگ گلیوں کے باعث امدادی کارروائیوں میں مشکلات کا سامنا ہے۔

ملبہ ہٹانے کے لیے ہیوی مشینری استعمال کی جارہی ہے جب کہ ملبے تلے اب بھی کئی افراد کے دبے ہونے کا خدشہ ہے جس کے پیش نظر ملبہ ہٹانے کا کام احتیاط سے کیا جارہا ہے۔

‘ملبے میں پھنسے افراد کے کل تک فون آتے رہے آج خاموشی ہے’
متاثرین اپنے پیاروں کی زندگی کے لیے دعا گو ہیں، بعض افراد کا کہنا ہے کہ انہیں ملبے میں پھنسے افراد کے کل تک فون آتے رہے تو زندگی کی امید تھی لیکن اب کوئی فون بھی نہیں آرہا جس کی وجہ سے وہ پریشان ہیں۔

پولیس نے واقعے کا مقدمہ عمارت کے مالک کے خلاف درج کرلیا ہے۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ سانحہ گولیمار سے بچنے کے لیے ضروری ہےکہ غیر معیاری، غیر قانونی تعمیرات کو روکا جائے اور مخدوش عمارتوں کو جلد ازجلد خالی کرایا جائے۔

دوسری جانب سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی(ایس بی سی اے) نے شہر میں انتہائی مخدوش عمارتوں کو فوری طور پر مسمار کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

ترجمان ایس بی سی اے کے مطابق انتہائی خطرناک اور مخدوش عمارتوں کی نشاندہی کے لیے گلبہار میں سروے کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کےبعد اس طرح کی عمارتوں کو فوری خالی کراکے مسمار کیا جائے گا۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »