تازہ ترین
دریائے سندھ کی 3 ڈولفنز کو سیٹلائٹ ٹیگس لگاکر دریا میں چھوڑ دیا گیاصدارتی نظام کا شوشہ حکومتی ناکامی اور مہنگائی سمیت عوام کے سلگتے مسائل سے توجہ ہٹانے کی کوشش ہے، محمد حسین محنتیایک ہفتے میں 24 اشیا کی قیمتوں میں اضافہ، مہنگائی کی شرح 19.36 فیصد پرآگئیلمس: ملازمین کے کاموں میں سکندر جونیجو، سرفراز میمن ودیگر رکاوٹ اور بلیک میلنگ کر رہے ہیں: قلندر بخش بوزدارکراچی کی ضروریات کونظراندازکرنا کمزورمعیشت سے کھیلنے کے مترادف ہے، میاں زاہد حسینشرمیلا کی والدہ سے کیا ان کے بینک اکاؤنٹس کا پوچھتی؟ نادیہ خانڈکیتی کے کیس میں شوہر کے سامنے خاتون سے زیادتی کا بھی انکشافلاہور: انار کلی بازار دھماکے کیلئے کتنے دہشتگرد آئے؟ تفصیلات سامنے آ گئیںگرل فرینڈ کی ماں کو گردہ عطیہ کرنے والے شخص کو دھوکا، لڑکی نے کسی اور سے شادی کرلیبھیک مانگنے والی لڑکی پر دکاندار نےگرم گھی پھینک دیاجماعت اسلامی کی جانب سے لاہور بم دھماکے کی مذمتناقص پلاننگ اور تاخیر سےکیےگئے فیصلے سانحہ مری کی اہم وجہ ہیں، تحقیقاتی رپورٹکراچی میں تیسری شاہ اکیڈمی کرکٹ پریمئیر لیگ شروع، چار ٹیموں کے درمیان دلچسب مقابلےپانچ شہروں سے متعلق ریڈالرٹ جاری کیا ہوا ہے، شیخ رشیدکنزیومر موومنٹ غریب عوام کی داد رسی کے لیے جنگی بنیادوں پر کام کرے، محمد حسین محنتیمسلم ممالک ہماری حکومت کو تسلیم کریں، افغان وزیراعظمپریانتھا کو کس نے قینچی ماری اور کس نے لاش جلائی؟ 7 مرکزی ملزمان کا پتا چل گیالاہور میں دھماکا، ایک شخص جاں بحق اور متعدد زخمیایران کے ساتھ مذاکرات پر ہار ماننے کا وقت نہیں، امریکی صدرپاکستان کی پہلی خواجہ سرا ڈاکٹر سارہ گل نے ملک میں ایک نئی تاریخ رقم کی ہے، سعید غنی

نئی دہلی سے ڈی پورٹ ہونے والی برطانوی رکن پارلیامنٹ پاکستان پہنچ گئی

برطانوی رکن پارلیمنٹ ڈیبی ابراہمز کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام انتہائی مشکل صورتحال سے دوچار ہیں ،کشمیریوں کو اپنے مستقبل کے فیصلے کرنے کا اختیار ملنا چاہیے۔

اسلام آباد میں انسٹی ٹیوٹ آف اسٹریٹیجک اسٹڈیز کے تحت مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر آل پارٹی پارلیمانی کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔

کانفرنس میں مسئلہ کشمیر کے حوالے سے دورہ پاکستان پر آئے برطانوی پارلیمانی وفد نے بھی شرکت کی۔
دو روز قبل نئی دہلی سے بے دخل (ڈی پورٹ) کی جانے والی برطانوی پارلیمانی گروپ برائے کشمیر کی چیئرپرسن اور لیبر پارٹی کی رہنما ڈیبی ابراہمز نے کہا کہ 5 اگست 2019 کے بعد سے مقبوضہ کشمیر کے عوام انتہائی مشکل صورتحال سے دو چار ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ برطانیہ نہ پاکستان کا حامی ہے اور نہ ہی بھارت کا مخالف ہے بلکہ ہماری تشویش انسانی حقوق کی پامالی پر ہے۔

ڈیبی ابراہمز کا کہنا تھا کہ کشمیریوں کو اپنے مستقبل کے فیصلے کرنے کا اختیار ملنا چاہیے۔

برطانوی رکن پارلیمنٹ کا کہنا تھا کہ بھارتی حکومت نے مقبوضہ کشمیر کا دورہ کرنے کی اجازت نہیں دی، دورے کا مقصد زمینی حقائق معلوم کرنا تھا۔

انہوں نے ہر ممکن تعاون پر پاکستانی حکومت کا شکر یہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے سربراہ بھی جلد پاکستان کا دور ہ کریں گے۔

‘برطانوی پارلیمانی ارکان جہاں چاہیں جاسکتے ہیں’
اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ 5 اگست کے بعد بھارتی اقدامات سے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال مزید بگڑ گئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ برطانوی پارلیمانی ارکان جہاں جانا چاہیں جاسکتے ہیں، بھارتی اقدامات سے مودی حکومت کا اصل چہرہ دنیا کے سامنے آگیا۔

خیال رہے کہ لیبر پارٹی کی رکن پارلیمنٹ ڈیبی ابراہمز کو دو روز قبل نئی دہلی کے اندرا گاندھی ائیرپورٹ پر روک لیا گیاتھا۔

ڈیبی ابراہمز برطانوی پارلیمانی گروپ برائے کشمیر کے وفد کے ہمراہ مقبوضہ کشمیر جانا چاہتی تھیں تاکہ وہاں کی اصل صورتحال دنیا کے سامنے آسکے۔

وہ مودی حکومت پر کڑی تنقید اور بھارت کے مقبوضہ کشمیر میں غیرآئینی اقدامات کی کھل کر مخالفت کرتی آئی ہیں۔

انہوں نے برطانیہ میں انڈین ہائی کمشنر کو خط میں لکھا تھا کہ مقبوضہ کشمیر کی آئینی حیثیت کی تبدیلی سے بھارت نے کشمیریوں کو دھوکا دیا ہے۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »