تازہ ترین
سعید غنی کی ہتک عزت کی درخواست پر پی ٹی آئی رہنما حلیم عادل پر فرد جرم عائدراولپنڈی میں شادی ہال کی لفٹ گرگئی، ایک شخص جاں بحق، متعدد زخمیسانحہ مری انتظامیہ کی غفلت سے پیش آیا، انکوائری کمیٹی کی رپورٹصدرمملکت نے ایف بی آر کی انتظامی ناانصافی پر بزرگ شہری سے معذرت کرلیجھوٹ اور غلط بیانی وفاقی وزراء کا وطیرہ بن چکا ہے، امتیاز شیخشریف فیملی حکومت سے چار لوگوں کیلئے ڈیل مانگ رہی ہے، شہباز گل کا دعویٰشہزادہ ہیری نے گارڈز واپس لینے کیلئے برطانوی حکومت کیخلاف مقدمے کی دھمکی دیدیانسٹا گرام اب ٹک ٹاک کو اپنے پلیٹ فارم پر شامل کرنے کو تیارمیں عمران نیازی کو رات کو ڈراؤنے خواب کی طرح آتا ہوں: شہباز شریففیکٹری میں زہریلی گیس پھیلنے سے چینی شہری ہلاک، 2 متاثردنیا بھر میں اومی کرون سونامی کی طرح پھیلنے لگالی مارکیٹ کی عمارت سے اینٹی ائیرکرافٹ گن سمیت نیٹو کا جدید اسلحہ برآمد’اب بل نہیں سندھ واپس لیں گے‘، بلدیاتی قانون کیخلاف پی ٹی آئی، MQM اور GDA کا مظاہرہطالبان نے افغان اثاثوں کی بحالی کا مطالبہ کر دیاکورونا: این سی او سی نے پابندیوں کا نفاذ شروع کردیاعلی زیدی پی ٹی آئی کے سیکریٹری اطلاعات احمد جواد کے انکشافات پر صفائی دیں، سعید غنیایس بی سی کے سرٹیفکیٹ کےبغیر نئی عمارات کو یوٹیلیٹی کنکشنز نہ دینے کا حکمکیا منال نے احسن کی دولت کی وجہ سے ان سے شادی کی ہے؟کورونا کیسز: سندھ حکومت کا اسکول کھلے رکھنے کا فیصلہبپن راوت کا ہیلی کاپٹرگرنے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ سامنے آگئی، وجہ کیا تھی؟

مردہ ماں کو 12 سال فریزر میں رکھنے والے بہن بھائی کی موت سے متعلق اہم انکشاف

کراچی میں مردہ ماں کو 12 سال تک فریزر میں محفوظ رکھنے والے بہن بھائی سے متعلق پولیس تفتیش کے بعد نئے انکشافات سامنے آگئے۔

گلشن اقبال کراچی کی کچرا کنڈی سے ملنے والے انسانی ڈھانچے کا معاملہ نفسیاتی المیہ لگ رہا ہے۔ پولیس نے ڈھانچہ پھینکنے والے شخص کو گرفتار کیا تو معلوم ہوا کہ 12 سال پرانا ڈھانچہ ذکیہ بی بی کا ہے جبکہ محبوب نامی ملزم مرحومہ کا بھائی ہے۔

پولیس کے مطابق ذکیہ بی بی کے انتقال کے بعد ان کے بیٹے قیصر اور بیٹی شگفتہ نے دفنانے کے بجائے اُنہیں فریزر میں محفوظ کرلیا تھا اور دونوں بہن بھائی ماں کی لاش فریزر میں رکھنے کے بعد دوسرے فلیٹ میں منتقل ہوگئے تھے جہاں سے وقتاً فوقتاً پرانے فلیٹ آتے جاتے رہے۔
پولیس تفتیش میں نیا انکشاف یہ ہوا ہے کہ گزشتہ سال 4 اکتوبر کو قیصر اور شگفتہ نے خود کشی کی تھی جس کی وجہ سامنے نہیں آئی مگر دونوں نے ایک ساتھ زہر پیا، جس کے بعد قیصر موقع پر ہلاک ہوگیا جبکہ شگفتہ کی موت دوران علاج رواں سال 29 جنوری کو ہوئی۔

پولیس کے مطابق قیصر چارٹڈ اکاؤنٹنٹ تھا جبکہ شگفتہ کچھ نہیں کرتی تھی، دونوں نے شادی نہیں کی تھی، پڑوسیوں نے دونوں کو نفسیاتی طور پر غیر متوازن قرار دیا ہے۔

واقعے کا مقدمہ سرکار کی مدعیت میں درج کرلیا گیا ہے جبکہ ذکیہ بی بی کی باقیات کی تدفین پولیس تفتیش مکمل ہونے کے بعد کی جائے گی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز کراچی کے علاقے گلشن اقبال میں خاتون کی 12 سال پرانی لاش ملی تھی جسے بچوں نے دفنانے کے بجائے فریزر میں رکھ دیا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ذکیہ کا انتقال ہوا تو اُس کے بیٹے اور بیٹی نے دفنانے کے بجائے ماں کی لاش فریزر میں محفوظ کرلی، تاکہ جب دل چاہے اس کو دیکھ سکیں۔

جب ذکیہ کے بیٹے اور بیٹی کا بھی انتقال ہوگیا اور فلیٹ سے بدبو آنے لگی تو ہمسائیوں نے ذکیہ کے بھائی محبوب کو اطلاع دی جو کچھ دن دیکھ بھال کے بعد ڈھانچے کو ٹھکانے لگانا چاہ رہا تھا کہ پکڑا گیا۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »