تازہ ترین
کیوی وزیر اعظم نے کورونا کے باعث اپنی شادی ملتوی کر دیرضوان آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی کرکٹر آف دی ایئر قرارمسلم عقیدے کے سبب وزارتی ذمہ داریوں سے فارغ کیا گیا: برطانوی رکن پارلیمنٹمارٹرگولہ پھٹنے سے 4 افراد جاں بحقاغوا برائے تاوان کی وارداتوں میں ملوث جعلی کسٹم انسپکٹرگرفتارنوازشریف کو باہر بھیجنے کا فیصلہ 100 فیصد عمران خان کا تھا: اسد عمر29واں آل پاکستان شوٹنگ بال ٹورنامنٹ کا آغاز:70ٹیموں مد مقابل ہیںایلون مسک دماغی چپ کی انسانی جانچ کے قریبسندھ پولیس کے پاس واٹس ایپ کال ٹریس کرنے کی ٹیکنالوجی موجود نہ ہونے کا انکشافپپدریائے سندھ کی 3 ڈولفنز کو سیٹلائٹ ٹیگس لگاکر دریا میں چھوڑ دیا گیاصدارتی نظام کا شوشہ حکومتی ناکامی اور مہنگائی سمیت عوام کے سلگتے مسائل سے توجہ ہٹانے کی کوشش ہے، محمد حسین محنتیایک ہفتے میں 24 اشیا کی قیمتوں میں اضافہ، مہنگائی کی شرح 19.36 فیصد پرآگئیلمس: ملازمین کے کاموں میں سکندر جونیجو، سرفراز میمن ودیگر رکاوٹ اور بلیک میلنگ کر رہے ہیں: قلندر بخش بوزدارکراچی کی ضروریات کونظراندازکرنا کمزورمعیشت سے کھیلنے کے مترادف ہے، میاں زاہد حسینشرمیلا کی والدہ سے کیا ان کے بینک اکاؤنٹس کا پوچھتی؟ نادیہ خانڈکیتی کے کیس میں شوہر کے سامنے خاتون سے زیادتی کا بھی انکشافلاہور: انار کلی بازار دھماکے کیلئے کتنے دہشتگرد آئے؟ تفصیلات سامنے آ گئیںگرل فرینڈ کی ماں کو گردہ عطیہ کرنے والے شخص کو دھوکا، لڑکی نے کسی اور سے شادی کرلیبھیک مانگنے والی لڑکی پر دکاندار نےگرم گھی پھینک دیاجماعت اسلامی کی جانب سے لاہور بم دھماکے کی مذمت

11 ماہ کے بچے کو زندہ جلانے کے جرم میں نانا اور نانی کو قید کی سزا

روس کے وفاقی جمہوریہ خاکاسیا میں 11 ماہ کے نواسے کو زندہ جلانے کے جرم میں نانا اور نانی کو جیل بھیج دیا گیا۔

جمہوریہ خاکاسیا کے گاؤں خاروئے میں 21 سالہ وکٹوریہ ساگا لاکووا اپنے 11 ماہ کے بیٹے کو والدین کے پاس گھر پر چھوڑ کر باہر گئی تھی اور جب واپس آئی تو اسے اپنے بچے کی لاش ملی۔

عدالت میں دوران سماعت یہ بات سامنے آئی کہ ماں کے جانے کے بعد بچے نے رونا شروع کردیا۔ بچے کے مستقل رونے کے وجہ سے نشے میں دھت نانی نے اُس کا گلا دبایا تاکہ وہ چپ ہوجائے۔

خاتون کے اس عمل سے بچے کے جسم نے بلکل حرکت کرنا چھوڑ دی جس کے بعد اس کے نانا نے بچے کو جلتے چولہے میں رکھ دیا جس کی وجہ سے بچے کا پورا جسم بری طرح جھلس گیا۔
جب بچے کی ماں گھر لوٹی اور اپنے بچے کو تلاش کیا تو بچے کی بری طرح جلی ہوئی لاش چولہے پر رکھی پائی۔

فرانزک رپورٹ کے مطابق بچے کا جسم 100 فیصد جل چکا تھا اور بچے کی موت چولہے میں جلنے کی وجہ سے ہوئی ہے۔

جب 43 سالہ زاحنا میا گاشیوا نے بچے کا گلا دبایا تب بچہ مرا نہیں تھا اور اس کی سانسیں چل رہی تھیں۔ بچے کی موت جلنے اور کابن مونوآکسائیڈ کی وجہ سے ہوئی۔

کیس کی سنوائی کے دوران دونوں ملزم ایک دوسرے پر الزام ڈالتے رہے۔ نانا نے کہا کہ اس نے اپنے نواسے کو نہیں مارا، میں سگریٹ پینے کے بعد سونے کیلئے چلا گیا تھا اور پھر واش روم گیا تب میری بیوی نے مجھے بتایا کہ اس نے ہمارے نواسے کو مار دیا ہے۔
دوسری جانب بچے کی نانی بھی جرم سے انکار کرتی رہی لیکن پڑوسی شخص کے بیان کی بنیاد پر یہ ثابت ہوگیا کہ بچے کو اس کے نانا نے ہی چولہے پر ڈالا تھا۔

پڑوسی نے بتایا کہ بچے کا نانا شراب کے نشے میں پاگل ہوچکا تھا۔

عدالت نے نانا الیگزینڈر کو 15 سال قید جبکہ اُس کی بیوی زاحنا کو 9 سال قید کی سزا دی ہے۔

بچے کی ماں وکٹوریا کا کہنا ہے کہ مجھے بلکل یقین نہیں آرہا ہے کہ میرے ماں باپ نے میری اولاد کو قتل کردیا۔

وکٹوریا نے سوشل میڈیا پر ایک سال پُرانی پوسٹ شئیر کرکے اپنے بچے کی یاد میں جذباتی میسج بھی لکھا ہے۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »