تازہ ترین
سابق وزیر اعظم عمران خان کی حمایت میں ملک گیر مظاہروں کے بعد بیرون ملک بھی مظاہروں کا سلسلہ جاریعمران کے فونز چوری ہونے کا معاملہ، سی سی ٹی وی فوٹیجز میں گمشدگی کے شواہد نہ مل سکےحکومت کا چیئرمین نیب کو ہٹانے کا فیصلہکراچی دھماکا: وزیراعظم کا وزیراعلیٰ کو فون، ہر ممکن تعاون کی پیشکشملک میں ڈالر 196 روپے کا ہوگیاآرٹیکل 63 اے کی تشریح کیلئے صدارتی ریفرنس پر سماعت مکمل، فیصلہ آج سنایا جائیگاخشک سالی میں گھرے چولستان کے باسی قطرہ قطرہ پانی کو ترس گئےکراچی کے علاقے کھارادر میں دھماکا،خاتون جاں بحق، 12 افراد زخمیکراچی کے علاقے کھارادر میں دھماکے کی اطلاعپانی کی قلت، دریائے سندھ بعض مقامات پر صحرا بن گیاسیسی میں کام کرنے والے نجی سیکورٹی گارڈز کی کم سے کم اجرت 25 ہزار کردی گئی: سعید غنیروپے کے مقابلے میں ڈالر کی اونچی اڑان جاری، آج کتنا مہنگا ہوا؟شیخ محمد بن زید سے شارجہ کے المرشدی قبیلے کے سربراہ قاسم المرشدی کی تعزیتعمران خان کے جان کے خطرے سے متعلق بیان پر جوڈیشل کمیشن بنانے کی پیشکشعمران خان کی سیکیورٹی کیلئے پولیس، ایف سی کی بھاری نفری تعیناتادارہ مداخلت کرے، ٹیکنوکریٹ حکومت لائے اور ستمبر میں الیکشن کرائے: شیخ رشیدسلیکٹڈ وزیر اعظم سے نجات بیرونی سازش نہیں ، جمہوری عمل تھا، بلاولوزیراعظم شہباز شریف کی شیخ خلیفہ کی وفات پر یو اے ای کے صدر شیخ محمد بن زید النہیان سے تعزیتنئی حکومت کے دعووں کے برعکس آٹا،گھی،گوشت اوردالیں سمیت بڑہتی ہوئی مہنگائی باعث تشویش ہے: محمد حسین محنتیحکومت کا پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار رکھنے کا اعلان

ہم پر مزید ٹیکس لگایا جائے، امریکی کھرب پتی افراد کا مطالبہ

امریکہ کے 19 کھرب پتی افراد نے مطالبہ کیا ہے کہ ان پر مزید دولت ٹیکس عائد کیا جائے تاکہ معاشرے میں معاشی عدم مساوات میں کمی اور ملکی آمدنی میں اضافہ ہو۔

2020 کے امریکی انتخابات کے لیے متوقع امیدواروں کے نام اپنے خط میں انہوں نے کہا ہے کہ امیروں پر مزید ٹیکس لگانا امریکہ کی اخلاقی اور معاشی ذمہ داری ہے۔

خط میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ امریکی خزانے میں آنے والے اضافی ڈالر متوسط طبقے کے بجائے امراء کی جیبوں سے نکلنے چاہئیں۔

خط پر دستخط کرنے والے کھرب پتیوں میں مشہور لبرل انسان دوست جارج سوروس اور ان کے بیٹے کے علاوہ فیس بک کے شریک بانی کرس ہیوز بھی شامل ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ اس طرح اگلے 10 برسوں میں تین ہزار ارب ڈالر کی رقم اکٹھی ہو سکتی ہے جسے صاف توانائی، بچوں کی دیکھ بھال، انفراسٹرکچر کی ترقی اور کم آمدنی والے خاندانوں کو سہولیات کی فراہمی پر خرچ کیا جا سکتا ہے۔

انہوں نے سینیٹر ایلزبتھ وارن کی اس تجویز کی حمایت کی جس میں کہا گیا تھا کہ 5 کروڑ ڈالر سے زیادہ اثاثے رکھنے والوں پر 2 فیصد جبکہ ایک ارب ڈالر سے زیادہ اثاثوں کے مالکان پر 3 فیصد ٹیکس لگایا جائے۔

سینیٹر ایلزبتھ وارن نے اندازہ لگایا تھا کہ اس نئے ٹیکس سے صرف 75000 امیر خاندان متاثر ہوں گے۔

کھرب پتیوں نے اپنے خط میں کہا ہے کہ اس ٹیکس کے ذریعے ہم مشترکہ مستقبل کو لاحق بڑے چیلنجز کو حل کر سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم امریکہ کے دس فیصد امیرترین لوگوں کا بھی ایک فیصد ہیں، ہماری مجموعی دولت نچلے 90 فیصد طبقے کے برابر ہے، ہمیں امریکہ کے بہتر مستقبل کے لیے مزید ٹیکس دینے پر فخر ہونا چاہیئے۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »