تازہ ترین
ٹرک سے 400 کلو سے زائد چرس بر آمد، ملزم گرفتارافسران کے تبادلے کا معاملہ، وزیراعلیٰ سندھ کی افسران کو چارج نہ چھوڑنے کی ہدایتعمران خان کی حکومت گرانے کیلیے تمام آئینی وقانونی راستے اختیار کرینگے، پیپلز پارٹیطالبان نے بدھا مجسموں کی جگہ اور قدیم یادگاروں کو سیاحت کیلئے کھول دیاروپے کی قدر میں زبردست کمی کے باوجود درآمدات بڑھ رہی ہیں، میاں زاہد حسینعاصمہ جہانگیر فاؤنڈیشن نے نوازشریف کی تقریر پرحکومتی تنقید مسترد کردیائیرپورٹ پر مسافر کے بیگ سے کروڑوں روپے کی ہیروئن برآمدکراچی سمیت سندھ میں سی این جی اسٹیشنز کو ڈھائی ماہ کیلئے کی فراہمی بندججز کے سیمینار میں چیف گیسٹ اسے بلایا گیا جسے سپریم کورٹ نے سزا دی: وزیراعظمیو اے ای میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کردی گئیآڈیو لیک: فرض کریں ٹیپ درست ہے تو اصل کلپ کس کے پاس ہے؟جسٹس اطہر من اللہ’کورونا کے نئے ویرینٹ کا علم نہیں، تعلیمی سرگرمیاں جاری رکھنا چاہتے ہیں‘عمران خان کو نوجوان اقتدار میں لائے تھے وہی بھگائیں گے، سراج الحقاومی کرون سے متاثرہ مریضوں میں معمولی علامات ہیں، جنوبی افریقا میڈیکل ایسوسی ایشنمال و دولت نہیں بلکہ تعلیم سب سے بڑی نعمت ہے، محمد حسین محنتیحکومت نے آئی ایم ایف شرائط کے تحت منی بجٹ لانے کا فیصلہ کرلیااین اے 133 ضمنی الیکشن: ووٹرز سے قرآن پر حلف لیکر ووٹ خریدنے کے الزاماتگرین لائن منصوبہ کب آپریشنل ہو گا؟ اسد عمر نے کراچی والوں کو خوشخبری سنا دیمال دولت نہیں انسان کے اندر غیرت ضروری ہے، وزیراعظماومی کرون وائرس کا خدشہ: سندھ میں بوسٹر ڈوز لازمی قرار

درختوں بھرے پارک میں ہفتے میں دو گھنٹے گزاریں، جسمانی اور ذہنی سکون پائیں

لندن: درختوں بھرے پارک، سرسبز علاقے یا پرسکون جگہ پر ہفتے میں دو گھنٹے گزارنے سے جسمانی اور ذہنی سطح پر خوشی اور صحت کے جذبات پیدا ہوتے ہیں۔

اگرچہ فطرت اور قدرتی نظاروں میں وقت گزارنے کے صحت پر اثرات باقاعدہ طور پر رپورٹ ہوئے ہیں، تاہم اس سروے سے قبل کسی نے بھی پارک میں جانے اور بیٹھنے کے اثرات کے لیے کم سے کم ضروری وقت کی پیمائش نہیں کی تھی۔

یونیورسٹی آف ایکسیٹر کے سائنسدانوں نے پہلی مرتبہ اس ضمن میں 20 ہزار برطانوی باشندوں کا سروے کیا ہے اور یہ جاننے کی کوشش کی ہے کہ بہتر اثرات کےلیے کسی پارک یا درختوں کےجھنڈ میں کتنا وقت گزارنا ضروری ہے۔

گزشتہ ہفتے یہ رپورٹ منظرِعام پر آئی ہے جس میں یونیورسٹی کے پروفیسر میتھیو وائٹ نے کہا کہ یہ وقت ایک ہفتے میں دو گھنٹے سے زیادہ ہو تو اس کے واضح فوائد برآمد ہوتے ہیں اور یہی اس فائدے کا جادوئی نمبر بھی ہے۔ سروے میں دو گھنٹے سے کم وقت پارک کو دینے والے افراد نے اپنی صحت پر کوئی خاص اثرات کا ذکر نہیں کیا۔

’یہ کوئی زیادہ وقت نہیں۔ آپ چاہیں تو ایک ہی دفعہ دو گھنٹے پارک یا سبزے میں گزاریں یا پھر اسے سات دنوں پر تقسیم کردیں‘۔ اس ضمن میں آکسفورڈ یونیورسٹی کی ماہر راشیل اسٹینکلف کہتی ہیں ’ہم ایک عرصے سے جانتے ہیں کہ فطری مقامات بدن اور دماغ پر اچھے اثرات مرتب کرتے ہیں۔ دو گھنٹے کا وقت وہ ’خوراک‘ ہے جو ہر ایک کے لیے ضروری ہے اور یہ صحت مند رویوں کے لیے ایک اہم پیش رفت ہے۔‘

میتھیو وائٹ کہتے ہیں کہ خواہ آپ کسی بھی عمر، جنس اور قوم سے تعلق رکھتے ہیں، ہفتے میں دو گھنٹے کسی پرفضا مقام پر گزاریں، چہل قدمی کیجئے یا تیز قدموں سے چلیے، اس کے بہترین اثرات مرتب ہوں گے۔ اگر آپ دوڑ نہیں سکتے تو کسی بنچ پر بیٹھ کر سبزے کو دیکھیں اور اسے محسوس کیجئے۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »