تازہ ترین
ٹرک سے 400 کلو سے زائد چرس بر آمد، ملزم گرفتارافسران کے تبادلے کا معاملہ، وزیراعلیٰ سندھ کی افسران کو چارج نہ چھوڑنے کی ہدایتعمران خان کی حکومت گرانے کیلیے تمام آئینی وقانونی راستے اختیار کرینگے، پیپلز پارٹیطالبان نے بدھا مجسموں کی جگہ اور قدیم یادگاروں کو سیاحت کیلئے کھول دیاروپے کی قدر میں زبردست کمی کے باوجود درآمدات بڑھ رہی ہیں، میاں زاہد حسینعاصمہ جہانگیر فاؤنڈیشن نے نوازشریف کی تقریر پرحکومتی تنقید مسترد کردیائیرپورٹ پر مسافر کے بیگ سے کروڑوں روپے کی ہیروئن برآمدکراچی سمیت سندھ میں سی این جی اسٹیشنز کو ڈھائی ماہ کیلئے کی فراہمی بندججز کے سیمینار میں چیف گیسٹ اسے بلایا گیا جسے سپریم کورٹ نے سزا دی: وزیراعظمیو اے ای میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کردی گئیآڈیو لیک: فرض کریں ٹیپ درست ہے تو اصل کلپ کس کے پاس ہے؟جسٹس اطہر من اللہ’کورونا کے نئے ویرینٹ کا علم نہیں، تعلیمی سرگرمیاں جاری رکھنا چاہتے ہیں‘عمران خان کو نوجوان اقتدار میں لائے تھے وہی بھگائیں گے، سراج الحقاومی کرون سے متاثرہ مریضوں میں معمولی علامات ہیں، جنوبی افریقا میڈیکل ایسوسی ایشنمال و دولت نہیں بلکہ تعلیم سب سے بڑی نعمت ہے، محمد حسین محنتیحکومت نے آئی ایم ایف شرائط کے تحت منی بجٹ لانے کا فیصلہ کرلیااین اے 133 ضمنی الیکشن: ووٹرز سے قرآن پر حلف لیکر ووٹ خریدنے کے الزاماتگرین لائن منصوبہ کب آپریشنل ہو گا؟ اسد عمر نے کراچی والوں کو خوشخبری سنا دیمال دولت نہیں انسان کے اندر غیرت ضروری ہے، وزیراعظماومی کرون وائرس کا خدشہ: سندھ میں بوسٹر ڈوز لازمی قرار

سندھ کا آئندہ مالی سال کا بجٹ پیش کر دیا گیا

کراچی: وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ صوبے کا آئندہ مالی سال کا بجٹ پیش کر رہے ہیں۔

سندھ اسمبلی میں بجٹ تقریر کے دوران صوبائی وزیر داخلہ نے بتایا کہ حکومت کا سرکاری ملازمین کی تنخواہ 15 فیصد بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ نئے مالی سال کا بجٹ 12 کھرب 18 ارب ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ نئے مالی سال میں بورڈ آف روینو کو وصولیوں کا ہدف 145 ارب مقرر کیا گیا ہے۔ جبکہ 835 ارب روپے وفاق سے محصولات کی مد میں وصول ہوں گے جو مجموعی بجٹ کا 74 فیصد ہے۔

ترقیاتی فنڈز کی مد میں 283.5 ارب مختص
مراد علی شاہ نے بتایا کہ ترقیاتی فنڈز کی مد میں 5۔283 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔ ترقیاتی فنڈز میں ضلع اے ڈی پی کے 228 ارب بھی شامل ہیں۔

تعلیم کیلئے 178 ارب سے زائد فنڈز مختص
انہوں نے کہا کہ تعلیم کیلئے 178 ارب سے ذائد فنڈز مختص کیے گئے ہیں جو گزشتہ سال کے مقابلے 15 ارب زائد ہیں۔

یونیورسٹی اور بورڈ شعبے کیلئے 5۔10 ارب مختص
وزیراعلیٰ سندھ نے بتایا کہ یونیورسٹی اور بورڈ شعبے کیلئے 5۔10 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔ آئی بی اے سکھر میں مصنوعی ذہانت اور این ای ڈی میں کمپیوٹر سینٹر قائم کیے جائیں گے، جبکہ سندھ یونیورسٹی کے بدین اور میرپور خاص کیمپس قائم کیے جائیں گے۔

شعبہ صحت کیلئے 4۔114 ارب روپے مختص
وزیراعلیٰ سندھ نے بتایا کہ این آئی سی وی ڈی، جے پی ایم سی اور این آئی سی ایچ اور انڈس اسپتال، ایس آئی یو ٹی اور سیٹلائیٹ سینٹر کیلئے 114.4 ارب روپے کی رقم مختص کی گئی ہے۔ جبکہ ٹی بی کنٹرول پروگرام کو وسعت دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

لاڑکانہ میں مینٹل ہیلتھ سروسز کیلئے 275 ملین مختص
مراد علی شاہ نے بتایا کہ لاڑکانہ میں مینٹل ہیلتھ سروسز کیلئے 275 ملین روپے مختص کیے گئے ہیں۔ صوبے میں مزید چھ چیسٹ پین یونٹ بھی قائم کیے جائیں گے۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »