تازہ ترین
آڈیو لیک معاملہ، قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات نے ثاقب نثار کو طلب کرلیاالیکشن کمیشن کا ووٹ چیک کرنیوالی ایس ایم ایس سروس مفت کرنے کا فیصلہٹی ایل پی کے سربراہ کا آئندہ الیکشن میں بھرپور طریقے سے حصہ لینے کا اعلانہم سندھ میں بلدیاتی انتخابات مارچ 2022 چاہتے ہیں، مردم شماری پر ہمارے آج بھی تحفظات ہیںسندھ ہائیکورٹ نے فریال تالپورکوبیرون ملک جانے کی اجازت دے دیپولیس اہلکار کا گھر پر حملہ، خاتون سے اہل خانہ کے سامنے زیادتیکراچی: نسلہ ٹاور کے باہرمتاثرین اور بلڈرز کا احتجاج، پولیس کا لاٹھی چارج اور شیلنگپاکستان عالمی مالیاتی ادارے کے نرغے میں پھنس چکا ہے، میاں زاہد حسینپاک بنگلادیش ٹیسٹ کے دوران اسٹیڈیم کے باہرآتشزدگی، دھواں گراؤنڈ میں داخلپیٹرول پر تمام ٹیکس ختم کردیے، تیل کی قیمت میں کمی کا سب فائدہ عوام کو دینگے‘ملک میں گیس کا بحران سنگین، شہریوں کیلئے روز ہوٹل سے کھانا خریدنا مشکل ہو گیابھارت نے پاکستان سے فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت مانگ لیحکومت سے مذاکرات کامیاب ہونے پر پیٹرولیم ڈیلرز نے ہڑتال ختم کردیمہنگی بجلی، قلت کےساتھ مہنگاپیٹرول پی ٹی آئی ایم ایف ڈیل کے تحفے ہیں، بلاولپیٹرول کتنا مہنگا ہونے والا ہے؟ بری خبر آگئیعدلیہ کو بدنام کرنے کا الزام، مریم اور شاہد خاقان کیخلاف درخواست پر سماعت کل ہوگیبلاول بھٹو زرداری سے پاک افغان امور پر برطانوی وزیراعظم کے نمائندے نائجل کیسی کی ملاقاتسراج الحق کی افغانستان کے وزیرپٹرولیم اور مذکراتی ٹیم کے رکن ملا شہاب الدین دلاور سے ملاقات کیسندھ میں آٹے کی کوئی کمی نہیں ہےروٹیشن پالیسی: وزیراعلیٰ سندھ جزوی طور پر افسران کے تبادلوں پر رضامند ہوگئے

ایمنسٹی اسکیم ٹیکس اکھٹا کرنے کے لیے نہیں اکانامی کو دستاویزی بنانے کے لیے ہے: شبر زیدی

لاہور: فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے اعزازی چیئرمین شبر زیدی کا کہنا ہے کہ ایمنسٹی اسکیم کا مقصد ٹیکس اکٹھا کرنا نہیں ہے بلکہ اس کا مقصد معیشت کودستاویزی بنانا ہے۔

لاہور میں تقریب سے خطاب میں اعزازی چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی کا کہنا تھا کہ ہمارا المیہ ہے کہ ٹیکس نیٹ محدود رہا ہے، لوگوں کی سہولت کے لیے ایمنسٹی اسکیم کو سادہ اور آسان بنایا گیا ہے، ایمنسٹی اسکیم کا مقصد ٹیکس اکٹھا کرنا نہیں ہے بلکہ اس کا مقصد اکانومی کودستاویزی بنانا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بے نامی قانون کے تحت یہ اسکیم متعارف کرائی گئی ہے، بینکس بھی نظر رکھ رہے ہیں تاکہ بے نامی اکاؤنٹس کا خاتمہ ہو، یہ ایمنسٹی اسکیم بھرپور ہوگی لوگ اس سے فائدہ اٹھائیں، ہمارا مقصد قطعی کسی کو ہراساں کرنا نہیں ہے اور افسران کو کہا ہے کہ کسی کو بلاوجہ تنگ نہ کیا جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ آپ کو بتاناچاہتا ہوں کہ آپ کی رقم پاکستان میں محفوظ ہے، ٹیکس نیٹ میں شامل ہوں خود بھی کلیئر ہوں اور ملک کی ترقی میں ساتھ دیں، یہاں صرف سیلز ٹیکس رجسڑڈ کی تعداد 43 ہزار ہے، ایک لاکھ کمپنیاں رجسٹرڈ ہیں لیکن صرف 50 ہزار ٹیکس ریٹرن جمع کراتی ہیں۔

شبر زیدی کے مطابق پارلمنٹیرینز کا مسئلہ ہےکہ وہ بھی غیردستاویزی نظام میں شامل ہیں، پارلیمنیٹرینز کو پکڑنے کا مسئلہ نہیں بلکہ ہم نظام درست کرنا چاہتے ہیں، بےنامی لاء بنایا گیا لیکن ابھی تک اس پرعمل نہیں کیاگیا، ہم سب کے لئے ضروری ہے کہ بےنامی قانون کو سمجھا جائے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے بہت عام اور آسان اسکیم متعارف کروائی ہے، ٹیکس دہندگان اور انکم ٹیکس آفیسرز کے درمیان قربت نہیں ہونی چاہیے، کرپشن کا مسئلہ حل کرنے کے لیے سب کی رائے لینا چاہتا ہوں، مستقبل میں پاکستان سے باہر پیسہ لیکر جانا آسان نہیں ہوگا، پاکستان میں عوام کا پیسہ زیادہ محفوظ ہوگا۔

چیئرمین ایف بی آر کا کہنا تھا کہ میرا ارادہ بندے کے بجائے ادارے کو پکڑنا ہے، اس طرح کسی ایک بندے کو پکڑنا مسئلے کا حل نہیں، چاہتا ہوں کہ جو انڈسٹری ٹیکس نہیں دیتی اسے پکڑیں، شوگر، پیپر، اسٹیل اور پراپرٹی سمیت سب کو ڈاکومینٹڈ کرنا ہوگا۔

یاد رہے کہ وفاقی کابینہ نے اثاثے ظاہر کرنے کی اسکیم کی منظوری دے ہے جس سے فائدہ اٹھانے کیلئے 30 جون تک کی مہلت دی گئی ہے۔

اسکیم کے تحت ملک اور بیرون ملک موجود رقوم اور جائیدادیں ظاہر کرنے پر 4 فیصد رقم جمع کرانی ہوگی، رقم ہر صورت میں بینکوں میں جمع کرانی ہوگی۔

پیسہ پاکستان نہ لانے پر 6 فیصد رقم قومی خزانے میں جمع ہوگی، جائیداد کی مالیت ایف بی آر ویلیو سے ڈیڑھ گنا زیادہ تسلیم کی جائے گی اور اسکیم سے فائدہ اٹھانے والوں کیلئے ٹیکس ریٹرنز دینا لازمی ہوگا۔

About قومی مقاصد نیوز

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »