تازہ ترین
این اے 133 ضمنی انتخاب، پی پی کو 2018 کے مقابلے میں 26ہزار728 ووٹ زیادہ ملےبھارتی ریاست ناگالینڈ میں سکیورٹی فورسز نے فائرنگ کر کے 13مزدور مار ڈالےآئی ایم ایف کی نئی شرائط ملکی اداروں کو گروے رکھنے کے مترادف ہے، محمد حسین محنتیوہاڑی واقعہ، عثمان بزدار کی قائداعظم کے مجسمے پر فوری طورپر عینک لگانے کی ہدایتمنی لانڈرنگ کیس: جیکولین فرنینڈس کو بھارت سے باہر جانے سے روک دیا گیاگوادر کوقومی اور بین الاقوامی مافیاز کے رحم وکرم پر نہیں چھوڑیں گے، سراج الحقوزیراعظم کا پریانتھا کمارا کو بچانےکی کوشش کرنیوالے شخص کیلئے تمغہ شجاعت کا اعلانپریمئیر لیگ کرکٹ ٹورنامنٹ میں ملک بھر سے 12 ٹیموں کے 200 پلئرز نے حصہ لیاتیز رفتارگاڑی نے 4 بچوں کوکچل دیا، ایک بچہ جاں بحقاسسٹنٹ کمشنر کو فائرنگ کرکے قتل کردیا گیادنیا کی معمر ترین ٹیسٹ کرکٹر ایلین ایش110سال کی عمر میں انتقال کر گئیں’وزیراعظم 10 دسمبر کو کراچی کے پہلے جدید ترین ٹرانسپورٹ سسٹم کا افتتاح کریں گے‘ٹائر پھٹنے پر مسافروں کا طیارے کو دھکا لگانے کا انوکھا واقعہپاکستان سمیت دنیا بھر میں آج سندھی ثقافتی دن منایا جارہاہےلڑکی سے زیادتی کے الزام میں گرفتار سینئر سول جج ضمانت پر رہاسیالکوٹ واقعہ: گرفتار افراد میں سے 13 اہم ملزمان کی شناخت، تصاویر جاریملک میں قرآن و سنت جمہوریت و آئین کی بالادستی کیلئے اچھی قیادت کو آگے لانا ہوگا۔ لیاقت بلوچلاقانونیت اور کرپشن نے ملک کو کھوکھلا کر دیا، سراج الحقایک شخص مشتعل ہجوم سے پریانتھا کمارا کو بچانےکی تن تنہا کوشش کرتا رہاملک میں سونا 600 روپےفی تولہ سستا ہوگیا

گیس قیمتوں میں اضا فے کے بجائے لائن لا سز اور گیس چوری پر قابو پا یا جائے۔ میاں زاہد  حسین

 

کراچی : پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولز فور م وآل کراچی انڈسٹریل الائنس کے صدر ،بزنس مین پینل کے سینئر وائس چےئر مےن اور سابق صوبائی وزیر میاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ اوگر ا نے گیس کی قیمتوں میں اضا فے کا اشارہ دے دیا ہے ۔ حکومت نے اکتوبر 2018میں گیس کے ریٹس میں 143فیصد اضا فہ کیا تھااور اب ایک بار پھراوگرا نے یکم جولائی2019 سے گیس کی قیمت میں 75سے 80فیصدتک اضا فہ کا عند ےہ دے دیا ہے جس کا سبب SNGPLکی جا نب سے گیس کی قیمت میں 723 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو اضا فے کی اجاز ت ہے ۔ میاںز اہد حسین نے بز نس کمیو نٹی سے گفتگو میں کہا ہے کہ گیس کے ریٹ بار بار بڑھنے کی وجہ سے ملک میں توانائی کا شعبہ عدم استحکام کا شکا ر ہوچکا ہے جس سے نا صرف عوام بلکہ، ملکی صنعتیں، معیشت، ٹرانسپورٹ اور سرما ےہ کاری پر منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں۔ میاںز اہد حسین نے
خد شے کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ گیس کی قیمتوں میں مز ید اضا فہ سے سی این جی سیکٹر کو بھی خاطر خواہ نقصان ہونے کا اندیشہ ہے۔ حکومت ٹرانسپورٹ انڈسٹری میں سی این جی کی کھپت میں اضا فے سے نا صرف سی این جی انڈسٹری کو گیس کی قیمتوں میں متوقع اضا فے کے باعث ہونے والے ممکنہ نقصا نات سے تحفظ دے سکتی ہے بلکہ ملکی معیشت کی تر قی کے لئے سا لانہ 1ارب ڈالر کا زرمبا دلہ بھی محفوظ کر سکتی ہے ۔اگر حکومتی سطح پر ٹرانسپورٹ سیکٹر میںدرآمدی آئل (پیٹرول اور ڈیز ل وغیرہ) کے بجائے سی این جی کے استعمال کی حوصلہ افزائی کی جائے تو آئل امپورٹ بل میں خاطر خواہ کمی لائی جاسکتی ہے جس سے ملکی معیشت کاانرجی مکس متواز ن ہو جائے گا اور سالانہ ایک ارب ڈالرکی بچت سے ملکی معیشت بہتر ہوگی۔اوگرا کی جانب سے گیس کی قیمت میں اضا فے کا فیصلہ نہا یت تشویش نا ک ہے ۔ اندازے کے مطابق صرف کراچی شہر میں ایک ہزار صنعتی یونٹس کے آپریشنز قدرتی گیس کے مرہون منت ہیں جو کہ ملک کی معا شی ترقی میں ریڑھ کی ہڈی کا کردار ادا کرتی ہے ۔ اگر اس مجوزہ
اضا فے کا نفاذ عمل میں لا یا گیا تو پورے ملک میں مہنگا ئی کا طوفان برپا ہو جائے گا ۔ جس سے عوام اور صنعتکار یکساں متاثر ہو ں گے ۔ملک کی بیشتر صنعتیں اس اضا فے سے براہ راست متاثر ہوں گی اور ان کی مینو فیکچرنگ اور پروسیسنگ کی لاگت میں اضا فہ سے ان کی کاروباری لا گت میں اضا فہ ہو جائے گا ۔ جس سے عام مصنوعات کی قیمتوں میں بھی ہوشربا اضا فہ ہو جائے گا اور ایکسپورٹ شدید متاثر ہوں گی۔میاں زاہد حسین نے کہا کہ سالا نہ 50ارب روپے کی گیس چوری ہو جا تی ہے جس کا بوجھ براہ راست صا رفین کو منتقل کر دیا جا تا ہے جبکہ SSGSاور SNGPLکی سالانہ لا ئن لاسز 25-30ارب روپے ہے جس کو روکنے کی ضرورت ہے ۔ گیس کی قیمتوں میں اضا فہ کے بجائے لائن لا سز کے خا تمہ اور گیس کی چوری پر قابو پا یا جائے ۔ کاروباری لا گت میں اضا فہ سے صنعتوں کو درپیش پریشا نیوں میں مزید اضا فہ ہوگا ۔ پاکستان موجودہ وقت میں صنعتوں کی تنز لی کا متحمل نہیں ہو سکتا جس سے بے روز گار ی اور غربت میں اضا فہ ہوگا۔ اس لئے حکومت صنعتوں کے فروغ اور ترقی کے لئے مستحکم بنیادوں پر پالیسیا ں مرتب کرے اور صنعتکا روں اوربز نس کمیونٹی کی سفارشات کی روشنی میں صنعتوں کے مسائل کا حل تلاش کرے ۔میاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ گیس کی قیمتوں میں متوقع اضا فہ ملک میں ہونے والی سرماےہ کاری کی فضا ءکو شدید متاثر کر سکتا ہے اور سرماےہ کار وں کی حوصلہ شکنی کا با عث ہو سکتا ہے ۔

About Niaz Khokhar

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*

Translate »